راجہ گدھ

(Mrs. Sahar Ali, )
 کہنے کو تو سات اپنے ایک دنیا چلتی ہے
پر چھئپ کے اس دل میں تنا ئی بستی ھے

راجہ گدھ محترمہ بانو قدسیہ کے ایک شہرہ آفاق میں ایک ناول ہے۔جو زندگی کی گہراہیوں کو بہت قریب سے دیکھاتا ہے ۔کچھ ایسے حقا ہق دکھاتا ہے جن کو ہم یکسر نظرانداز کر دیتے ہیں۔

ایک ایسا ناول جو آپ کو بہت کچھ سو چھنے پر مجبور کر دیتا ہے۔جو ہمارے لئے سوال پیدا ہوتا ہے کہ کیا ہم ایک بیمار معاشرے کا حصہ ہیں۔جہاں جنگل کا قانون چلتا ہے۔جہاں مزہب کی اہمیت نہیں ،جہاں انسان اور جانور میں کوئی فرق نہیں۔اور انسان کے اندر صرف حوس ہے ایک ایسی چیز جو انسان کو ایک جانور سے بھی بد تر کر دیتی ہے۔سوچنے کی بات ہے کے جب اشر ف لمخلوقات ہی جانور کی جگہ پر آ جاہیں تو جانور کہاں جاہیں۔اور جانور میں بھی گدھ کی مثال دی ہے۔جو کے مردار(مراہواجانور) کھاتا ہے۔

یعنی انسان بھی تو غیبت کرتا ہے۔جھوٹ بولتا ہے۔ہروہ کام کرتا ہے جس سے اس کو فاہدہ ہو۔وہ بھول جاتا ہے کے اس کو حلال اور حرام کا بھی خیال رکھنا ہے۔وہ ہر کام اپنے فاہدے کو ذہن میں رکھ کر کرتا ہے
اس کہانی میں بتایا گیا ہے کے دوسروں کے پیچھے بھاگنے والا انسان زندگی بھر بھاگتا ہے اور خالی ہاتھ رہ جاتا ہے وہ دوسروں کی دیکھا دیکھی میں خود کو برباد کر دیتا ہے ۔ایسا کرنے سے سب سے پہلے اس کی زندگی سے سکون ختم ہو جاتا ہے۔وہ حالات کاسامنا کرنے سے ڈرتا ہے۔وہ دنیا میں گھلنے ملنے کی کو شش کرتا ہے مگر نہ کام ہوتا ہے ۔اس کی ناکامی کی بڑی وجہ اس کا حرام اور حلال کی تمیزنہ کرنا ہے۔وہ اپنے گرد ایسے حالات پیدا کرتا ہے کے وہ اس میں بری طرح پھس جاتا ہے۔یہ ایسا دلدل ہے کے اس میں نہ صرف وہ خود بلکہ اس کی اولاد بھی پھنس جاتی ہے۔

میرا ذاتی خیال ہے کے یہ ناول آج کے زمانے کے لحا ظ نوجوانوں کو ایک بہتر راہ دیکھا سکتا ہے۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Sahar Ali

Read More Articles by Sahar Ali: 23 Articles with 72251 views »
https://www.youtube.com/channel/UCJp9DAvuxtE-Wt5KhEaZxpw.. View More
11 Feb, 2017 Views: 1977

Comments

آپ کی رائے
Mene raja gidh parhi nhi, lekin ab dil kr rha zarur parhne ko. Your work is admirable
By: Shoaib, Islamabad on Feb, 13 2017
Reply Reply
0 Like
yes u r right,,,,very nice,,,,
By: Mini, mandi bhauddin on Feb, 12 2017
Reply Reply
1 Like
raja gidh maine abhi tak read nahi kia magar ye artical read karne ke bad zaroor karo ge :)
By: Zeena, Lahore on Feb, 11 2017
Reply Reply
2 Like
Bilkul karna...ye her insan ki life say jurta hay .
By: Sahar Ali, Rawalpindi on Feb, 12 2017
0 Like
nice article,,,,,,,,,, my favorite novel raja gadh
By: umama khan, kohat on Feb, 11 2017
Reply Reply
1 Like
Yup i like it too
By: Sahar Ali, Rawalpindi on Feb, 12 2017
0 Like