اجڑے خواب قسط نمبر ٨

(Nadia khan, rawalpindi)
قبروں میں نہیں ہم کو کتابوں میں اتارو ۔۔۔۔۔۔۔؟؟ ہم لوگ محبت کی کہانی میں مرے ہیں ۔۔۔۔؟؟
اچانک ہی بادل بڑے زور سے گرجے تھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ تیز ہوا کا ایک جھونکا آیا اور کاٹیج کا دروازہ بڑی زور سے بند ہوا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ باہر شاہد بارش ہورہی تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ پانی کی بوندیں دروازے اور کھڑکیوں سے ٹکرا کر بڑی زور کی آوازیں پیدا کررہی تھیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ لیکن وہ کچھ نہیں سن پارہی تھی اس کے کان بند ہوگئے تھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ یا شاہد اس کے اپنے وجود میں اتنا تیز طوفان اٹھ رہا تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟اتنا زبردست شور تھا کہ باہر کی آوازیں اس شور کے آگے ماند تھیں تڑاخ ۔۔۔۔۔۔ تڑاخ ۔۔۔۔۔۔ تڑاخ سوچ کی لہریں بپھری ہوئی آتیں اور اس کے سارے وجود پر طمانچہ برسانے لگتیں مگر وہ بلبلاتی نہیں تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ حرکت نہیں کرتی تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ کسی فالج زدہ بوڑھے کی طرح بے حس وحرکت پڑی چھت کو گھور رہی تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ آس پاس کی ہر شے خاموش تھی ساکت تھی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ ساری رات وہ یونہی بستر پر پڑی رہی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بارش پوری رات ہوتی رہی تھی اور اور پوری رات اس کی وجود ملامت ۔۔غم وغصے اور اپنے وجود سے اٹھیتی کراہیت کے طوفان کے تھپیڑے کھائے تھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟؟ چرر ۔۔۔۔رر ۔۔۔ دروازہ شاہد ہوا سے کھلا تھا اور پھر تیز ہوا سے ہی بند ہوا ۔۔۔۔دھڑ ۔۔۔ زور سے آواز آئی اور وہ اچھل کر بیٹھ گئی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ نہیں ۔۔۔۔نہیں ۔۔۔۔۔۔نہیں ۔۔۔۔۔۔وہ سر پکڑ کر چیخ اٹھی تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ بستر سے اتر کر وہ آہستہ آہستہ چلتی باہر آگئی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ بارش کا زور کم ہوگیا تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ اب صرف ہلکی ہلکی بوندا باندی ہورہی تھی ۔۔۔۔۔؟سامنے ایزل پر لگا کینوس بے حد بدرنگ ہوچکا تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔؟ سارے نقوش بہہ گئے تھے وہ کسی معمول کی طرح چلتی ہوئی اس تک پہنچی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ساحل ۔۔۔۔۔۔۔ اس کے لب ہولے سے ہلے ۔۔۔۔۔۔ٹپ ٹپ ٹپ ۔۔۔۔۔۔۔۔؟بوندیں باقی ماندہ رنگوں کو اپنے ساتھ لیے پھسل رہی تھیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ ساحل اس کے حواس جیسے پلٹنے لگے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ساحل ۔۔۔۔۔۔۔ تم کہاں چلے گئے ہو مجھے چھوڑ کر ساحل اب میرے پاس کچھ بھی نہیں ہیں میرا سب کچھ لوٹ گئے ہیں اس نے زور سے چیخ ماری تھی اور پھر پھوٹ پھوٹ کر رونے لگی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ ۔۔۔؟ قبروں میں نہیں ہم کو کتابوں میں اتارو ۔۔۔۔؟ ہم لوگ محبت کی کہانی میں مرے ہیں ۔۔۔۔؟ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟؟؟جاری ہے قسط نمبر ٨
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Nadia khan

Read More Articles by Nadia khan: 10 Articles with 5421 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
24 Feb, 2017 Views: 741

Comments

آپ کی رائے
Interesting story but too short episodes.. try to write next episode lengthy ... stay blessed!!!
By: Faiza Umair, Lahore on Feb, 27 2017
Reply Reply
0 Like