ری ٹیلی کاسٹ(سو لفظوں کی کہانی )

(Mona Shehzad, Calgary)

آج اپنی بیٹی کے گھر کے دروازے کے باہر کھڑے اس کے پا٧ں کانپ رہے تھے. اس کے پورے جسم پر لرزه طاری تھا. اندر سے اس کا ہونہار داماد اور اس کے ماں کے چیخنے چلانے کی آوازیں آرہی تھیں وہیں پر اس کی بیٹی کی دبی دبی سسکیاں بھی سنائی دے رہی تھیں. وہ کانپتے پیروں سے پلٹ گیا. اس کے دماغ میں ان گالیوں کی بازگشت چل رہی تھی جو اس کا داماد اور اس کی ماں مل کر اس کی بیٹی کے سامنے اسے اور اس کی بیوی کا نام لے لے کر دے رہے تھے. اچانک تیس سال پہلے کا منظر اس کی آنکھوں کے آگے گھوم گیا جب وہ اپنی ماں کے ساتھ مل کر اپنے ساس سسر کا نام لے لے کر گالیاں دیتا تھا اور اس کی بیوی ہاتھ جوڑ جوڑ کر پالنے میں لیٹی بیٹی کے مستقبل کے واسطے دیتی تھی. اس کو ایسا لگا یہ تو اس کی لکھی ہوئی قسط کی ری ٹیلی کاسٹ ہے.

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Mona Shehzad

Read More Articles by Mona Shehzad: 168 Articles with 175553 views »
I used to write with my maiden name during my student life. After marriage we came to Canada, I got occupied in making and bringing up of my family. .. View More
15 Apr, 2018 Views: 204

Comments

آپ کی رائے