موجودہ دور کے شیریں فرہاد، عمار نے زینب سے محبت کیسے نبھائی؟

(Ambreen Sethi, Karachi)

موجودہ دور کے شیریں فرہاد، عمار نے زینب کی محبت میں ایسا کیا کر ڈالا کہ ان کی محبت کی داستان لازوال ہو گئی

محبت کی داستانوں کا تعلق کسی بھی تہذیب اور ثقافت سے ہو قربانی ، ایثار اور عشق ان کا سب سے اہم حصہ ہوتا ہے ۔اپنے محبوب کے لیۓ عاشق اپنا سب کچھ قربان کرنے کے لیۓ تیار ہو جاتے ہیں اور یہی قربانی ان کی اس داستان کو امر کر دیتی ہے-

حالیہ دنوں میں مادیت پرست کے اس دور میں ایسی محبت کی داستان قصے کہانیوں میں تو نظر آتی ہے مگر اصل زندگی میں سے اس کی نظیر بہت مشکل ہی سے ملتی ہے مگر پنجاب یونیورسٹی کے سوفٹ وئیر انجینئیرنگ کے دو طالب علم عمار اور زینب نے محبت کی ایسی ہی مثال قائم کی ہے جس کو دیکھ کر اب بھی انسانیت پر یقین برقرار ہو جاتا ہے -

عمار اور زینب کی محبت کی داستان کا آغاز 2011 میں اس وقت ہوا جب ان دونوں نے پنجاب یونیورسٹی میں داخلہ لیا عام نوجوانوں کی طرح ان کی اس محبت کی معراج بھی تعلیم کی تکمیل کے بعد شادی ہی تھی ۔ان کی خواہشات کا پاس رکھتے ہوئے ان کے گھر والوں نے ان کی شادی کی تاریخ 10 اگست 2018 طے کی-
 


مگر بدقسمتی سے شادی سے صرف دس دن قبل زینب کی طبیعت خراب ہوئی اور ٹیسٹوں کے بعد یہ روح فرسا انکشاف ہوا کہ زینب بلڈ کینسر میں مبتلا ہیں ۔ ایسے حالات میں جبکہ اس مہنگی ترین بیماری میں مبتلا زینب کے ساتھ زندگی بھر ساتھ نبھانے کا فیصلہ کرنا ایک مشکل ترین فیصلہ تھا عمار نے محبت کو نبھایا-

دس اگست 2018 کو وعدے کے مطابق عمار نے نہ صرف زینب سے نکاح کیا بلکہ اس کی بیماری کے علاج کی تمام تر ذمہ داری بھی نبھانے کا فیصلہ کیا ۔ اس موقع پر عمار کے گھر والوں کا رویہ بھی قابل ستائش ہے جنہوں نے نہ صرف عمار کے اس فیصلے کو سراہا بلکہ ہر طریقے سے اس کا ساتھ بھی دیا -

ابتدا میں اس جوڑے نے علاج کے لیے شوکت خانم کا انتخاب کیا مگر وہاں جدید سہولتوں کی کمیابی کے سبب عمار نے زینب کو چین لے جانے کا فیصلہ کیا جہاں اس بیماری کے علاج کے لیے سات کروڑ کی خطیر رقم درکار تھی جس کے لیے عمار کے بھائیوں نے بیرون ملک سے پیسہ بھیجا انہوں نے اپنے زیورات بیچ دیے اور دیگر ذرائع سے فنڈنگ کر کے زینب کے علاج کے لیے پیسہ جمع کیا اور اس کو لے کر چین چلے گے-

جہاں پر ان کے علاج کے ابتدائی سیشن ہوئے اگرچہ زینب کینسر کی بیماری کو عمار کی مدد سے شکست دینے میں کامیاب ہو چکی ہیں مگر اس کے باوجود ان کو پوری طرح صحت یاب ہونے کے لیے دو سال تک ادویات کا سہارا لینا پڑے گا مگر عمار کی محبت کے سہارے ہم سب کو یقین ہے کہ وہ اس میں بھی کامیاب ہو جائيں گی -

محبت کی یہ مثال اگرچہ آج کل کے دور میں ملنا بہت مشکل ہے مگر عمار نے یہ ثابت کر دیا کہ اگر ماضی کا فرہاد اپنی شیریں کے لیے دودھ کی نہر کھود سکتا ہے تو عمار بھی کسی سے کم نہیں ہیں-
 

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 786 Print Article Print
About the Author: Ambreen Sethi

Read More Articles by Ambreen Sethi: 5 Articles with 10141 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: