بہت زیادہ میک اپ کرنے والے خواتین اب ہوجائیں ہوشیار! کیونکہ ---

(Saleem Ullah Shaikh, Karachi)


میک اپ خواتین کی ایک بہت بڑی کمزوری ہے۔ خواتین کے ماہانہ بجٹ میں ایک بڑا حصہ کاسمیٹکس کے لیے مختص ہوتا ہے۔ خیر خوب صورت نظر آنا تو سب کا حق ہے اور سب ہی اس کے لیے کوششیں کرتے ہیں، البتہ خواتین اس معاملہ میں کچھ زیادہ ہی حساس ہوتی ہیں۔تاہم بہت زیادہ میک اپ اور کاسمیٹکس اشیا استعمال کرنے والے خواتین اب ہوجائیں ہوشیار!

کیونکہ برطانیہ میں ہونے والی ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ خواتین کے میک اپ کی سب سے زیادہ استعمال ہونے والی اور عام اشیا یعنی مسکارا ،لپ اسٹک ، لپ گلو وغیرہ میں جان لیوا جراثیم موجود ہوتے ہیں اور ان مصنوعات کے استعمال میں بے احتیاطی برتنے والی خواتین بیماری کا شکار ہوسکتی ہیں۔
 


آسٹن یونیورسٹی کی ایک طبی تحقیق میں یہ بات بتائی گئی کہ ہر 10 میں سے 9 یعنی 90 فیصد کاسمیٹکس مصنوعات ’’ای کولی ‘‘ اور دیگر جراثیم سے آلودہ ہوتی ہیں۔تحقیق میں بتایا گیا کہ بیوٹی بلینڈز، مسکار، لپ گلو میں سب سے زیادہ مقدار میں بیکٹیریا پائے جاتے ہیں۔

ریسرچ میں کہا گیا ہے کہ اگرچہ بیشتر بیکٹیریا قدرتی طور پر جلد میں موجود ہوسکتے ہیں لیکن میک اپ مصنوعات کی صورت میں وہ بیکٹیریا اسکن انفیکشن ، آئی انفیکشن ، اور بلڈ پوائزنگ تک کا خطرہ بڑھا دیتے ہیں، علاوہ ازیں یہ جراثیم آنکھوں، منہ یا کسی زخم وغیرہ کی صورت میں جسم میں داخل ہونے سے یہ انسانی جسم کے مدافعتی نظام کو نقصان پہنچاتے سکتے ہیں۔
 


ماہرین کے مطابق صارفین کی جانب سے کاسمیٹکس مصنوعات کے استعمال میں احتیاطی تدابیر اختیار نہ کرنے اور خیال نہ رکھنے کی وجہ سے جراثیم کی مقدار بہت زیادہ بڑھ جاتی ہے۔محققین کا کہنا تھا کہ اسفنج جیسے بیوٹی بلینڈز کو لیکوئیڈ فائونڈیشن مصنوعات لگانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے اور پھر اسے ایک طرف رکھ دیا جاتا ہے۔ اس طرح وہ اسفنج جراثیم کی افزائش کا گڑھ بن جاتا ہے۔

معروف میڈیکل میگزین جرنل آف اپلائیڈ مائیکرو بائیلوجی میں شائع ہونے والے اس تحقیق میں سائنس دانوں میں نے 470 کاسمیٹکس مصنوعات میں جراثیمی آلودگی کا جائزہ لیا۔جائزے میں یہ بات سامنے آئی کہ ان مصنوعات کے اسیک بار استعمال کے بعد ان میں جراثیمی آلودگی کی شرح 79 سے 90 فیصد تک بڑھ جاتی ہے۔ جب کہ 25 فیصد مصنوعات میں متعدد اقسام کی پھپھوندی FUNGI بھی دریافت کی گئی ۔
 


ماہرین نے صارفین کو مشورہ دیا ہے کہ میک ایک مصنوعات میں جراثیم کی افزائش کو روکنے کے لیے میک اپ کے لیے استعمال ہونے والے برشز کو ہر 7 سے 10 دن میں نیم گرم پانی میں شیمپو مکس کرکے ہر برش کو اس میں دھونا چاہیے اور اپنے برش کسی دوسرت کو استعمال کے لیے نہ دیں ۔

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 2315 Print Article Print
 Previous
NEXT 

YOU MAY ALSO LIKE:

Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Language: