ذیابیطس سے متاثرہ افراد کے لیے اہم ترین ٹیسٹ

اکثر بڑے بزرگ بیمار ہو جائیں تو مایوسی سے کہتے نظر آتے ہیں کہ اب یہ بیماری قبر تک میرے ساتھ ہی جائے گی۔ اگرچہ یہ صرف ایک سوچ ہے لیکن کچھ بیماریوں حقیقتاً عمر بھر انسان کے ساتھ ہی رہتی ہیں۔ ان میں ہی ایک ذیابیطس بھی ہے۔
 


ذیابیطس جسے شوگر یا ڈائیبیٹیز بھی کہا جاتا ہے عمر بھر ساتھ رہنے والی ایک بیماری ہے لیکن اس کے ساتھ ایک اچھی اور لمبی زندگی گزارنا ممکن ہے۔ اگرچہ کوئی بھی بیماری فائدہ مند نہیں ہے لیکن ذیابیطس کا ایک فائدہ یہ ضرور ہے کہ یہ مرض آپ کے لیے اپنا خیال رکھنے اور صحت کو اپنی ترجیحات میں صف اول پر رکھنے کو لازم کر دیتا ہے۔

اس کے لیے مستقل مزاجی سے روازنہ ورزش، اچھی خوراک اور دوا کا اہتمام ضروری ہے۔ گھر میں یا قریبی لیبارٹری سے وقتا فوقتا خون مین شکر کی مقدار کی جانچ بھی اہم ہے۔

دراصل ذیابیطس کے مریضوں میں اگر خون میں شکر کی مقدار مقررہ حدوں سے بڑھ جائے تو اس کے کئی نقصانات ہیں ۔ یہ آنکھوں سے لے کر پاؤں تک تمام اعضا کو متاثر کرتی ہے۔ اگر اس صورتحال پر ادویات اور طرز زندگی میں تبدیلیوں سے بروقت قابو نہ پایا جائے تو اس کے نقصانات ناقابل تلافی ہو سکتے ہیں۔
 


یہی وجہ ہے کہ ذیابیطس کے مریضوں کو کچھ خاص ٹیسٹوں کی سفارش کی جاتی ہے جو کہ مقررہ وقفے کے ساتھ کرواتے رہنے سے ان کی صحت اور جسم پر شوگر کی وجہ سے ہونے والی شکست و ریخت کا پتا لگایا جا سکتا ہے۔ بروقت تشخیص سے سد باب کا مناسب انتظام کیا جا سکتا ہے اور ادویات میں تبدیلی سے مستقبل میں اس قسم کے مزید نقصان سے بچا بھی جا سکتا ہے۔ ذیابیطس سے متاثرہ افراد کو درج ذیل ٹیسٹ کروانے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔

اے ون سی ٹیسٹ
بلڈ پریشر کی جانچ
آنکھوں کا معائنہ
گردوں کی کارکردگی کی جانچ
پیروں اور ٹانگوں کا معائنہ
دانتوں کا معانئہ
ای سی جی
کولیسٹرول کی جانچ
 


ذیابیطس کے علاج کے لیے پاکستان کے بہترین اینڈوکرئنولوجسٹ سے رابطہ اور مشورہ کیجیئے۔ مرہم کی مدد سے آپ ماہرین صحت سے باآسانی اپائنٹمنٹ بک کروا سکتے ہیں۔

 
Get Appointment of Doctors in Your City at Marham.pk
Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 2490 Print Article Print
 Previous
NEXT 

YOU MAY ALSO LIKE:

Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Language: