کیا آپ بھی اپنے بال کھاتے ہیں؟ 7 عجیب عادات جو حقیقت ہیں


اس دنیا میں کچھ لوگوں میں ایسی عجیب و غریب عادات پائی جاتی ہیں جو ان کے لیے نقصان دہ بھی ہوتی ہیں اور دیکھنے والوں کے لیے باعثِ حیرت بھی- کیا آپ سوچ سکتے ہیں کہ کوئی انسان پلاسٹک کا سامان کھائے یا پھر نیل پالش پیے- لیکن اسی قسم کی عجیب و غریب عادات کے مالک افراد یہ جانتے ہوئے بھی کہ یہ ان کے لیے نقصان دہ ہیں ان عادات کو ترک کرنے سے قاصر ہوتے ہیں٬ کیونکہ یہ ان کی زندگی کا حصہ بن چکی ہوتی ہیں- ایسے ہی 7 عجیب و غریب عادات کے بارے میں ہم آپ کو آج بتائیں گے جو سننے میں غیر حقیقی معلوم ہوتی ہیں لیکن یہ سب حقیقی طور پر دنیا کے چند افراد میں پائی جاتی ہیں-

Drinking Human Blood
پنسلوانیا سے تعلق رکھنے والی جولیا کیپلس نامی خاتون گذشتہ 30 سالوں سے روزانہ انسانی خون پیتی ہیں۔ کبھی کبھی ایک مہینے میں آدھے گیلن تک خون پی جاتی ہیں۔ خاتون کا ماننا ہے کہ انسانی خون پینے سے وہ اچھا محسوس کرتی ہیں جو انہیں زندہ رکھتا ہے اور انہیں خوبصورت بناتا ہے۔


Exercising
یقیناً ورزش کرنا کوئی بری بات نہیں ہے اور یہ ایک اچھی عادت بھی ہے- لیکن بعض لوگ حد سے زیادہ ورزش کرنے کے عادی ہوتے ہیں یہاں تک کہ یہ عادت ایک لت کی صورت اختیار کرجاتی ہے- لیکن یہ لت ان کے لیے انتہائی خطرناک ثابت ہوسکتی ہے- جیسے کسی چوٹ کے باوجود ورزش جاری رکھنا- حد سے زیاد ورزش جسم پر دباؤ بڑھا بھی دیتی ہے جو کہ نقصان کا باعث بن سکتا ہے-


Eating Glass
گلاس کھانے کی عادت کو طبی زبان میں hyalophagia کہتے ہیں۔ لوگ شیشہ کھانے کی لت سے بہت لطف اندوز ہوتے ہیں مگر یہ عادت آپ کے جسم کو اندر سے بری طرح متاثر کر دیتی ہے۔


Eating Soap or Laundry Detergent
صابن کھانا ایک بہت بری عادت ہے۔ اکثر لوگوں میں صابن کھانے کی عادت بھی بہت زیادہ پائی جاتی ہے۔ لانڈری ڈٹرجنٹ کھا کر اکثر افراد ہلاک ہو جاتے ہیں۔


Pulling Hair
بعض افراد کو اپنے بال کھینچنے کی عادت ہوتی ہے اور اس عادت کو trichotillomania کہا جاتا ہے- یہ لوگ اپنے جسم کے کسی بھی حصے کے بال نوچنے کے عادی ہوتے ہیں- اور جس وقت یہ لوگ یہ عمل کر رہے ہوتے ہیں اس وقت یہ شدید بےچینی میں مبتلا ہوتے ہیں- اس عادت میں مبتلا افراد بعض اوقات اپنے بال چبا یا کھا بھی جاتے ہیں-


Playing Video Games
ویڈیو گیم کی لت حقیقی تصور کی جاتی ہے جو عام طور اکثر نوجوان افراد میں پائی جاتی ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق 30 سال سے کم عمر افراد ویڈیو گیم کھیلنے کے عادی ہوتے ہیں۔ چند گھنٹوں تک مستقل ویڈیو گیم کھیلنا چند نوجوانوں ہلاکت کا سبب بھی بن چکا ہے- اسی لیے ماہرین اسے بھی ایک نشہ یا لت قرار دیتے ہیں جس کے عادی نوجوانوں کی زندگی بری طرح متاثر ہوتی ہے-


Being on Social Media
سوشل میڈیا کو بہت ہی خوبصورت انداز میں تخلیق کیا گیا ہے۔ مگر سوشل میڈیا کا زیادہ استعمال کرنے والے لوگ جذباتی اور نفسیاتی پریشانی کا شکار رہتے ہیں۔ سوشل میڈیا کی لت بھی آپ کے لئے بڑا مسئلہ بن سکتی ہے۔ اور سوشل میڈیا کے عادی یا اس نشے میں مبتلا افراد تو ہمیں اپنے اردگرد عام دکھائی دیتے ہیں-

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 2261 Print Article Print
 Previous
NEXT 

YOU MAY ALSO LIKE:

Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Language: