دنیا کی 10 انتہائی دلآویز آبشاریں

پانی ہمیشہ سے افراد کو لبھاتا ہے۔ خاص طور پر اس وقت جب پہاڑوں کی بلندی سے جھرنے شور مچاتے ہوئے زمین پر گرتے ہیں۔ دنیا کی دس خوبصورت آبشاروں کی تفصیلات درج ذیل ہیں:۔
 

آبشار وکٹوریہ
براعظم افریقہ کی یہ آبشار عالمی ثقافتی ورثے میں بھی شامل ہے اور دو ملکوں زیمبیا اور زمبابوے میں منقسم ہے۔ یہ دنیا کی سب سے چوڑی آبشار ہے۔ بارشوں میں کمی کی وجہ سے دریائے زیمبزی میں پانی کم ہوتا جا رہا ہے، جس کا اثر اس آبشار پر بھی پڑ رہا ہے۔


نیاگرا فال
نیاگرا آبشار امریکا اور کینیڈا کی سرحد پر ہے اور اس کا قدیمی نام ’چنگاڑتا پانی‘ ہے۔ بارشیں زیادہ ہوں تو اس آبشار سے شور مچاتے پانی کی شدت بھی انتہائی زیادہ ہوتی ہے۔ اس کا نظارہ بھی حقیقتاً شاندار ہے۔ نیاگرا فال میں تین آبشاریں شامل ہیں، ان کے نام امریکی فال، برائیڈل ویل فال اور ہارس شو فال ہیں۔


ایگواژُو آبشار
ایک سرحدی جھرنے سے پھوٹنے والا پانی کئی شاخوں میں بلندی سے زمین کی جانب گرتا ہے اور یہ ایگوا ژُو آبشاروں کا سلسلہ ہے۔ یہ برازیل اور ارجنٹائن کے درمیان ہے۔ یہاں پونے تین سو چھوٹی بڑی آبشاریں سات سو میٹر لمبی ایک آبشار میں مل جاتی ہیں۔ یہ بھی عالمی ورثے میں شامل ہے۔ پیدل چلنے والوں کے لیے پانی کے قریب تک پل بنائے گئے ہیں تا کہ وہ آبشار کا دلفریب نظارہ کر سکیں۔


بین جیوک ڈُوشیئن آبشار
چین اور وہیتنام کی سرحد پر واقع یہ آبشار بھی قدرت کا حسین نظارہ ہے۔ یہ دریائے کوائے سون پر واقع ہے۔ اس کی چوڑائی تین سو میٹر ہے۔ مئی سے ستمبر تک اس دریا میں مون سون کی بارشوں کی وجہ سے پانی بہت زیادہ ہوتا ہے اور اس باعث آبشار کی رونق بھی بہت زیادہ ہوتی ہے۔ اس کے ماحول کو خواب ناک قرار دیا جاتا ہے۔


اینجل فال
وینزویلا کی آبشار اینجل دنیا کی سب سے بلند واٹر فال ہے۔ یہ آؤیان تیپُوئی پہاڑ سے گرتی ہے۔ اس میں دریائے ریو چورُون کا پانی انتہائی بلندی سے نیچے کی جانب گرتا ہے۔ بلندی سے بظاہر یہ بارش کے قطروں جیسی ہے لیکن پہاڑی درے میں یہ ایک شوریدہ دریا کی صورت اختیار کر لیتی ہے۔ اس آبشار تک پہنچنا خاصا دشوار ہے۔ اینجل فال کو دیکھنا یا رسائی صرف کشتی سے یا ہوائی جہاز سے ممکن ہے۔


گلفاس
یورپی ملک آئس لینڈ آگ اور برف کا دیس ہے۔ جہاں برف ہوتی ہے وہاں پانی کی بہتات ہے۔ انہی میں گلفاس آبشار بھی ہے۔ یہ دو آبی گزرگاہوں سے انتہائی گہرائی میں گرتی ہے۔ یہ نظارہ دیکھنے کے راستے گولڈن سرکل پر واقع ہے۔ آبشار دیکھنے کے لیے ایک راستہ بھی تعمیر کیا گیا ہے۔


سلیا لینڈ فاس
آئس لینڈ میں ہزاروں چھوٹی بڑی آبشاریں ہیں۔ جنوبی آئس لینڈ میں واقع سلیا لینڈ آبشار سیاحوں میں بہت مقبول ہے۔ یہ دریائے سلیالنڈسا پر واقع ہے۔ اس کی سیاحت کرنے والے خوبصورت قدرتی منظر سے بھی لطف اندوز ہوتے ہیں۔ شام کے وقت آبشار سے منسلک پانی کے بڑے ذخیرے کی رنگت انتہائی حسین ہو کر رہ جاتی ہے۔


وضود آبشار
جمہوریہ المغرب (موراکو یا مراکش) کے الطاس پہاڑوں میں وضود آبشار واقع ہے۔ یہ مراکو کے صوبے ماراکش میں واقع ہے۔ الطاس پہاڑی سلسلے میں سے پھوٹنے والے کئی جھرنے وضود آبشار کو تشکیل دیتے ہیں۔ یہ مقامی اور غیر ملکی سیاحوں کا پسندیدہ مقام قرار دیا جاتا ہے۔ ایک کچے پہاڑی راستے سے نیچے پہنچ کر آبشار تک پہنچا جاتا ہے۔ انہی پہاڑی راستوں میں شرمیلے بندر باربیری کی ایک قسم بھی پائی جاتی ہے۔


پلِٹ وِس جھیل، نیشنل پارک
پلِٹ وِس جھیل کروشیا کے نیشنل پارک کا حصہ ہے اور یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے میں شامل ہے۔ سولہ جھیلیں مختلف آبشاروں کے سلسلے کے ساتھ جڑی ہوئی ہیں۔ کروشیا میں یہ سیاحوں کا ایک مقبول مقام ہے۔ ان جھیلوں اور آبشاروں کا نظارہ ہائیکنگ ٹریک کے علاوہ کشتی سے بھی کیا جا سکتا ہے۔


رائن فال
سوئٹزرلینڈ کے مقام شیف ہاؤزن میں دریائے رائن تقریباً پچیس میٹر کی بلندی سے پہاڑی راستے سے اپنے بالائی کھلی وادی میں گرتا ہے۔ یہ آبشار انتہائی حسین منظر کی حامل ہے۔ یہ مقام یورپ کی تازہ پانی کی بڑی جھیل کونسٹانس سے محض چند کلو میٹر کی مسافت پر ہے۔ اس کے نظارے کے لیے کشتیاں سیاحوں کو آبشار کے قریب تک لے جاتی ہیں جہاں اُن پر پھوار گرتی ہے۔


Partner Content: DW

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 3966 Print Article Print
 Previous
NEXT 

YOU MAY ALSO LIKE:

Most Viewed (Last 30 Days | All Time)

Comments

آپ کی رائے
Language: