حمل میں رکاوٹ کا سبب چینی، اگر آپ چینی کا استعمال ترک کردیں تو اور کتنے فائدے ہوں گے؟

چہرے پر داغ دھبے، ہونٹوں کے اوپر بال، اور یہاں تک کہ بانجھ پن - ایسے کئی اثرات ہیں جن کا شکار لوگ چینی کے بہت زیادہ استعمال کی وجہ سے ہوتے ہیں۔ تاہم چینی کا استعمال ترک کر کے یا کم کر کے ہم سپر ہیروز میں تبدیل نہ ہوں گے، لیکن یہ عمل یقینی طور پر ہماری زندگی اور ہماری صحت کو بہتر بنا سکتا ہے۔
 
 
حاملہ ہونے میں آسانی
چینی ہمارے خون میں موجود انسولین کو متحرک کر کے ہمیں توانائی دینے کی صلاحیت کے لئے جانی جاتی ہیں۔ لیکن انسولین ان ہارمونز کی طرح ہے جو حمل کے لئے ذمہ دار ہوتے ہیں۔ اگر خواتین بہت زیادہ چینی کا استعمال کرتی ہیں تو جسم میں اتنی انسولین موجود ہوتی ہے کہ وہ حمل کا سبب بننے والے ہارمونز سے الجھ جاتی ہے جس سے جسم ان ہارمونز کی سطح کو کم کرنے کے لئے کام کرنے لگتا ہے۔ اس کے نتیجے میں عورت کا حاملہ ہونا مشکل ہوتا ہے۔ اس لیے اس حوالے سے آسانی کے لیے ضروری ہے کہ چینی کا استعمال ترک یا کم کردیا جائے-
 
یادداشت میں بہتری
جب ہمارا معدہ ہمیں کہتا ہے کہ کچھ میٹھا کھانا چاہیے تو ہمارا دماغ انکار کرتا ہے لیکن کیوں؟ دراصل اگر آپ مسلسل چینی کھا رہے ہیں اور آپ کا وزن بھی نہیں بڑھ رہا تو اس کا مطلب ہے کہ آپ کا دماغ بےسکون ہے اور وہ سستی کا شکار ہوگیا ہے- اس سے ہماری فیصلہ لینے کی صلاحیت کمزور پڑ سکتی ہے- اس کے علاوہ چینی کے زیادہ استعمال سے ہمارا دماغ سکڑ رہا ہوتا ہے اور ہماری یادداشت پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہوتے ہیں-
 
خوشگوار موڈ
سائنسدانوں کا دعویٰ ہے کہ بہت زیادہ چینی کھانے سے موڈ میں خرابی پیدا ہو سکتی ہے اور یہاں تک کہ افسردگی بھی طاری ہوسکتی ہے۔ بہت زیادہ چینی اضطراب کی کیفیت پیدا کرتی ہے اور صحت مند جذبات کے ساتھ لوگوں کو اپنی زندگی سے لطف اندوز ہونے سے روک سکتی ہے۔ ایسا اس لئے ہوتا ہے کیونکہ بہت زیادہ چینی ہمارے جسم سے وٹامن بی نکالتی ہے ، اور یہ وٹامن ہمارے موڈ کے لیے ذمہ دار ہوتا ہے- اس لیے ہر وقت اگر خوشگوار موڈ کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں تو چینی کا استعمال کم سے کم کریں-
 
شوگر فیس سے بچیے
جب ہم چینی کے بارے میں سوچتے ہیں تو ، یہ اکثر وزن میں اضافے سے وابستہ ہوتا ہے۔ لیکن ماہر امراض جلد بھی اس "سفید دشمن" کے بارے میں فکر مند ہیں۔ ان کا دعویٰ ہے کہ شوگر ہارمونل تناؤ کو بھڑکاتا ہے، جس کی وجہ سے انسانی جلد کا رنگ خراب ہوتا ہے اور اس کا ایک خاص نام ہوتا ہے جسے "شوگر فیس" کہا جاتا ہے- اس میں جلد کی رنگت سرمئی، ابرو پتلے اور پورے چہرے پر دھبے ہوجاتے ہیں۔
 
بہترین بالوں کے لیے
چینی بالوں کو پتلا کرنے اور بالوں کے جھڑنے کے عمل کو تیز کرتی ہے- ایسا ہوتا ہے کیونکہ گلوکوز کی بڑھتی ہوئی سطح انسولین اور اسٹیرائڈز جیسے ہارمون کی متفقہ سطح کو اکساتی ہے، اور ہارمونل توازن رولر کوسٹر میں بدل جاتا ہے۔ اس کے بعد کھوپڑی کی اچھی طرح سے پرورش نہیں ہوتی ہے اور ہم بالوں کو کھونے لگتے ہیں۔ ڈاکٹروں کا دعویٰ ہے کہ چینی کا کم استعمال یا اسے ترک کرنا اس نقصان کو بحال نہیں کرسکے گا جو پہلے ہی ہوچکا ہے ، لیکن مستقبل میں بالوں کے جھڑنے کو روک سکتا ہے۔
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
22 Jan, 2021 Views: 4084

Comments

آپ کی رائے