فاؤنٹین پین یا بال پوائنٹ بہتر کون، پہلی بار فاؤنٹین پین کے استعمال کے تجربات ٹوئٹر کا ٹاپ ٹرینڈ کیسے بن گیا جانیں

 
انسان کی زندگی کے کچھ واقعات ایسے ہوتے ہیں جن کا سامنا ہر انسان کو اپنی زندگی میں ضرور کرنا پڑتا ہے لیکن ان کو دہرانے کا وقت اور موقع اسی وقت ملتا ہے جب کہ کوئی دوسرا اس کو ہمارے سامنے دہراتا ہے تو پھر کڑی سے کڑی جڑ جاتی ہے اور ہر بندہ اپنے اپنے تجربات اس حوالے سے بیان کرنا شروع کر دیتا ہے-
 
ایسا ہی کچھ ٹوئٹر پر بھی ہوا جب کہ معروف تاریخ دان اور موسیقی کے شعبے میں تحقیق کرنے والی ڈاکٹر کیتھرین شو فیلڈ نے اپنے برطانوی فالورز سے اسکول لائف میں پہلے فاؤنٹین پین یا سیاہی والے پین کے استعمال کے حوالے سے تجربات کے بارے میں دریافت کیا کہ کیا اب بھی لوگ اس پین کا استعمال کر رہے ہیں یا نہیں-
 
اگرچہ ان کا سوال برطانیہ کے فالورز کے لیے تھا مگر برصغیر پاک و ہند میں بھی موجود ان کے فالورز اس ٹرینڈ کو فالو کیے بغیر نہ رہ سکے اور انہوں نے اس حوالے سے اپنے تجربات اور یاداشتیں بھی شئیر کر دیں-
 
میرا پہلا پین
اس حوالے سے اپنی یاداشتیں تحریر کرتے ہوئے ہندوستان سے تعلق رکھنے والے سد آنند دھومے کا کہنا تھا کہ چھٹی کلاس میں پہنچنے کے بعد انہوں نے پہلا پین استعمال کیا جن میں پارکر پین، واٹر مین پین آج بھی ان کے پاس موجود ہیں- مگر انہوں نے ان کو سالوں سے دوبارہ استعمال نہیں کیا ہے-
 
 
بال پین استعمال کرنے پر پابندی
اسی حوالے سے ہندوستان سے تعلق رکھنے والی نشتھا گوتم کا یہ بھی کہنا تھا کہ ان کے اسکول میں بال پین کے استعمال پر سختی سے پابندی تھی- انہوں نے بھی فانٹین پین کا استعمال مڈل اسکول سے شروع کیا تھا مگر اب بھی استادوں کی ڈانٹ کے زیر اثر لکھنے کے لیۓ فانٹین پین ہی استعمال کرتی ہیں-
 
پاکستان کا بہترین پین پیانو
پاکستان کے رہائشی ایک یوزر نے اس ٹرینڈ کا حصہ بنتے ہوئے پاکستان کا بہترین فاونٹین پین پیانو کو قرار دیا ان کا کہنا تھا کہ چھٹی کلاس سے پاکستانی پیانو فاؤنٹین پین کا استعمال شروع کرتے ہیں خاص طور پر اردو لکھنے کے لیے تراشی ہوئی نب والا پیانو پین تھوڑا موٹا لکھتا ہے مگر تمام اساتذہ بہترین لکھائی کے لیے اسی کو تجویز کرتے تھے-
 
یونیفارم پر دھبے
فاؤنٹین پین کے استعمال کے حوالے سے نیپال کے ایک رہائشی ارجن کا یہ ماننا تھا کہ برصغیر پاک و ہند میں یہ ایک طے شدہ قانون ہے کہ چھٹی کلاس کے بعد انک پین کا استعمال ہوگا جس کے بدلے میں یونیفارم پر سیاہی کے دھبے بننا ہر طالب علم کے لیے لازم ہو جاتے ہیں-
 
 
اچھی لکھائی فاؤنٹین پین ہی سے ممکن ہے
بال پوائنٹ اور فاؤنٹین پین کی اس جنگ میں ایک یوزر کا کہنا تھا کہ ان کے اسکول میں بال پوائنٹ کے استعمال پر سختی سے پابندی تھی جو کہ درست ہی تھی کیوں کہ بال پوائنٹ کی نوک پتلی ہوتی ہے اور بالکل سیدھی ہوتی ہے- جس کی وجہ سے لکھائی بننے کے بجائے بگڑ جاتی ہے جب کہ فاؤنٹین پین لکھائی کو بہتر بنانے کے لیے بہترین ہوتا ہے-
 
ان یوزرز کی طرح یقیناً آپ کے بھی فاؤنٹین پین کے حوالے سے کچھ نہ کچھ تجربات ضرور ہوں گے اپنے طالب علمی کے دور کے ان واقعات کو کمنٹ میں ہمارے ساتھ شئير کریں اور اس ٹرینڈ کا حصہ بن جائیں-
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
15 Oct, 2021 Views: 1042

Comments

آپ کی رائے