فلک بوس عمارتیں ملبے کا ڈھیر، ہزاروں اموات۔۔۔ حالیہ چند سالوں کے بھیانک ترین زلزلے اور سونامی

 
افغانستان میں گزشتہ روز آنے والے زلرلے میں ایک ہزار سے زائد اموات کی تصدیق ہوگئی ہے جبکہ افغان حکام نے مزید ہلاکتوں کا خدشہ بھی ظاہر کیا ہے۔ زلزلے کی ریکٹر سکیل پر شدت 6اعشاریہ 1 ریکارڈ کی گئی تھی اور اس سے سب سے زیادہ نقصان افغانستان کے صوبے پکتیکا میں ہوا اور زلزلے کے جھٹکے پاکستان میں بھی محسوس کیے گئے- تاہم پاکستان میں کسی نقصان کی اطلاعات سامنے نہیں آئیں۔ افغانستان میں آنے والے اس خوفناک زلزلے سے پہلے بھی حالیہ چند سالوں میں مختلف ممالک میں کئی خطرناک زلزلے آچکے ہیں۔
 
ایران
12 نومبر 2017 کو ایران میں 3اعشاریہ 7 کی شدت کے زلزلے میں 400 سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے اور اس کے نتیجے میں عراق میں بھی چھ افراد ہلاک ہوئے تھے۔ اس زلزلے سے ایران کے مغربی صوبوں کے علاقوں کو سب سے زیادہ نقصان پہنچا تھا۔
 
میکسیکو
میکسیکو کے وسطی علاقوں میں 19ستمبر 2017 میں 7اعشاریہ1 شدت کے زلزلے نے تباہی پھیلا دی تھی جسکے نتیجے میں 369 لوگ لقمہ اجل بن گئے تھے۔
 
اٹلی
اگست 2016 یورپ کے دل اٹلی کے وسط میں میں 6اعشاریہ 2 شدت کا زلزلہ آیا تھا جس سے پہاڑوں پر بنی آبادیوں کو شدید نقصان پہنچا تھا اور 300 سے زائد لوگ ہلاک ہوئے تھے۔
 
افغانستان
افغانستان میں حالیہ زلزلے سے پہلے بھی اکتوبر 2015 کو شمال مشرقی علاقوں میں آنے والے زلزلے سے تقریباً 400 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ اس زلزلے کی شدت 7اعشاریہ 8 ریکارڈ کی گئی تھی جس سے پاکستان میں بھی جھٹکے محسوس کئے گئے تھے۔
 
جاپان سونامی
حالیہ تاریخ میں شدت کے اعتبار سے سب سے بڑا زلزلہ 11 مارچ 2011 کو جاپان میں آیا تھا جس نے سونامی کو بھی جنم دیا تھا۔ جاپان کے شمال مشرقی علاقوں میں آنے والے اس زلزلے میں تقریباً ساڑھے 15 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے اور پانچ ہزار سے زائد افراد زخمی ہوئے تھے۔ ریکٹر سکیل پر شدت 9اعشاریہ صفر ریکارڈ کی گئی تھی جس سے جاپان کے نیوکلیئر پلانٹس کو بھی شدید نقصان پہنچا تھا۔
 
پاکستان
پاکستان کے شمالی علاقوں اور آزاد کشمیر میں 8 اکتوبر 2005ء کو آنے والے ہولناک زلزلے میں تقریباً 80ہزار افراد لقمہ اجل بنے اور لاکھوں کی تعداد میں بے گھر ہو گئے۔ 2013میں بلوچستان میں 24 ستمبر کو مختلف وقفوں سے آنے والے دو زلزلوں کے نتیجے میں 825 سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے۔ریکٹر سکیل پر ان زلزلوں کی شدت 7.7 اور 6.8 ریکارڈ کی گئی تھی۔
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
22 Jun, 2022 Views: 1167

Comments

آپ کی رائے