جلد باز

(Zeena, Lahore)
“انسان اپنے لیے برائی ایسے مانگتا ھے،جیسے بھلائی۔بےشک انسان برا جلد باز واقع ھوا ھے۔۔۔
شٹ اپ، تمھاری ھمت کیسے ھوئی، ایسا بولنے کی وہ جیسی بھی ہے، مجھے دل و جان سے قبول ہے۔
تم جا سکتی ہو اب ، زیب نے دروازے کی طرف انگلی کر کے اسے دیکھے بغیر کہا ، وہ روتی ہوئی وہاں سے چلی گئی۔

ندا نے کچھ کہے بغیر لیپ ٹاپ بند کر دیا۔جو سکا ئپ پر اپنے منگیتر کی فرمائش پر آن لائن ھو ئی تھی۔کیو ں کے اسکی کالج کی دوست اسے دیکھنا چاہتی تھی۔جب وہ بری سی چادر لے کر سامنے آکر بیٹھی تو ندا نے اسکی چادر دیکھ کر بس اتنا کہا،زیب کس مو لانا ٹائپ لڑکی سے منگنی کر لی۔

ندا کو زیب کے الفاظ نے اندر تک سرشار کر دیا تھا۔تحفظ کا احساس ہی اسکے سارے اندیشے ختم کر گیا تھا۔
“پلیز میری بات سنو،، یار اب کوئی بات ہے نہیں میں کیا سنو،میرے گھر والے نہیں مان رہے ، ہزار بار بتا چکا ہوں ،اب دوبارہ فون نا کرنا۔ٹھک سے فون بند ہو گیا۔

وہ فون ہاتھ میں لیے جانے کب تک روتی رہی، آج نا اسے اسکے رونے کی پرواہ تھی نا کسی اور بات کی وہ جو ساتھ نبھانے کے وعدے تھے سب جھوٹ تھے۔مغرب کی اذان جب اسکی سمات سے ٹکرائی تب وہ ہوش میں آئی ،اور سیدھا اپنی امی کو زیب کے رشتے کے لیے ہاں بول آئی ،

اور آج جو ہوا، اسے لگا وہ واقعی جلد باز تھی ، وہ اللہ سے اسے مانگتی رہی جو اسکے لیے سٹینڈ تک نہی لے سکتا تھا۔
بے شک انسان برا جلد باز واقع ہوا ہے ،وہ کہ کر سجدے میں جھکتی چلی کئی۔۔۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Zeena

Read More Articles by Zeena: 92 Articles with 136697 views »
I Am ZeeNa
https://zeenastories456.blogspot.com
.. View More
28 Dec, 2016 Views: 1688

Comments

آپ کی رائے
Bht he zabardast article hai ..
By: Ali Raza, Rawalpindi on Feb, 09 2017
Reply Reply
0 Like
thank you
By: Zeena, Lahore on Feb, 10 2017
0 Like
Nice bhtreen msg hy
By: Anaam, Bhalwal on Jan, 20 2017
Reply Reply
0 Like
thnx :)
By: Zeena, Lahore on Jan, 20 2017
0 Like
عمدہ پیغام کہانی میں بیان کیا گیا ہے اس پرہماری نوجوان نسل کو سوچنا چاہیے۔کسی کی بھی زندگی سے محض وقت گزاری کے لئے کھیلنا نہیں چاہیے۔واقعی میں جو محبت کرتے ہیں وہ ایک ہونے کے لئے پوری دنیا سے بھی لڑ سکتے ہیں لیکن جو بھی کریں محبت کو بدنام نہ کریں کہ لوگوں کی نظر میں یہ جذبہ برا ہو جائے۔
By: Zulfiqar Ali Bukhari, Rawalpindi on Jan, 18 2017
Reply Reply
1 Like
pasand karne ka shukriya
By: zainab, Lahore on Jan, 18 2017
1 Like
ji bikul thek farmaya apne thnx
By: Zeena, Lahore on Jan, 18 2017
1 Like
bht khub sis
By: huma khan, kohat on Jan, 01 2017
Reply Reply
1 Like
thank you huma :)
By: Zeena, Lahore on Jan, 02 2017
1 Like
thank you huma :)
By: Zeena, Lahore on Jan, 02 2017
0 Like
MashaAllah its really very nice article .keep up the good work. Wish u best of luck for your future.
By: Sidra, Karachi on Dec, 31 2016
Reply Reply
0 Like
thank you sidra or dua ke liye ameen :)
By: Zeena, Lahore on Jan, 02 2017
0 Like
bhot khob bhtreen lesson hy bhot acha likha ap ny
By: Abrish anmol, Sargodha on Dec, 29 2016
Reply Reply
1 Like
thank you sis :)
By: Zeena, Lahore on Dec, 29 2016
1 Like
bohut nice short n sabaq amoz script laga mujhe..waqaee insaan ko her decision or step lene se pehle sochna chye....her baar qismat ko ilzaam dene ki nobat he na aye.,,likhte waqt ,,kahani k tasalsal ko berqaraar rakha karo..take reading k time jhatke na lagen..mind ko.shazeb....ibd
By: shazeb khan, islamabad on Dec, 28 2016
Reply Reply
1 Like
thnx :)
By: Zeena, Lahore on Dec, 29 2016
1 Like
niceeeee,,,zeena lo aa gya article
By: mini, mandi bhauddin on Dec, 28 2016
Reply Reply
1 Like
mini g sis aj dobara likha tou aya,,,,:)
By: Zeena, Lahore on Dec, 28 2016
1 Like
very very good zeena sis bht acha lika hai ap ni
By: umama khan, kohat on Dec, 28 2016
Reply Reply
1 Like
thank you umama :)
By: Zeena, Lahore on Dec, 28 2016
1 Like
congratulation at last you have your article sister
By: HuKhan, Karachi on Dec, 28 2016
Reply Reply
1 Like
hukhan bhai thnx :)
By: Zeena, Lahore on Dec, 28 2016
1 Like