نصیب

(Abrish anmol, Sargodha)
نصیب یہ لفظ ہر شخص کی زبان پر ہوتا ہے نصیب کا بہت گہرا تعلق ہے انسان کی زندگی سے لوگوں کا مانا ہے جو کچھ بھی واقعیات ہماری زندگی سے وابستہ ہوتے ہے وہ سب پھلے سے لکھے جا چکے ہوتے ہے اور جو ھمارے نصیب میں ہوتا ہے وہ خود بخود ہمیں مل جاتا ہے جو چیز نصیب میں نہیں ہوتی وہ مل کر بھی الگ ہو جاتی ہے ھمارے معاشرے میں ہر وه چیز جو نقصان میں ہو پھر وہ دکھ ہو یہ تکلف ہو نصیب کا نام دے دیا جاتا ہے کبھی کبھی اپنی حماقت سے کی کیے جانے والے فیصلوں کا سہرا بھی نصیب کے سر باندھ دیا جاتا ہے

تو کیا واقع ہی ایسا ہے سب کچھ نصیب میں پھلے سے لکھ دیا جاتا ہے اگر ایسا ہے تو پھر لوگ دعا پر کیوں یقین رکھتے ہے دعائیں کیوں مانگتے ہے پھر یہ جستجو کس بات کی ہے انسان کیا سوچ کر طلبگار بنتا ہے یہ کیسے پتہ چلتا ہے یہ چیز نصیب میں ہے اور یہ نہیں ہے کیونکہ یہ سچ ہے کہ نصیب کا تعلق ہم سے جوڑا ہے لیکن یہ غلط ہے کہ ہماری زندگی میں ہونے والے ہر اچھےبرے واقعیات کا تعلق نصیب سے ہے اللّه پاک نے انسان کو سوچ بوجھ دی ہے انسان کو بےشمار صلا حیت سے نوازا ہے للہ پاک نے انسان کو بااختیار بنایا ہیں نصیب کا تعلق ہماری زندگی میں انے والی آفات سے نہیں ہے اس کا انسان کے اپنے عمل سے ہے اگر کوئی خوشی ملے تو ہماری محنت کوئی دوکھ ملے کوئی غم ملے تو نصیب کچھ اچھا ہو تو ہمارا حق تھا کچھ برا ہو نصیب کیا نصیب صرف اس کا ہی نام ہے -
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Abrish anmol

Read More Articles by Abrish anmol: 27 Articles with 40685 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
11 Jan, 2017 Views: 1392

Comments

آپ کی رائے
جو ھمارے نصیب میں ہوتا ہے وہ خود بخود ہمیں مل جاتا ہے جو چیز نصیب میں نہیں ہوتی وہ مل کر بھی الگ ہو جاتی ہے یہ بات دل کو لگی ہے ۔آپ نے اچھے انداز میں اپنے احساسات کو بیان کیا ہے۔
By: Zulfiqar Ali Bukhari, Rawalpindi on Mar, 17 2017
Reply Reply
0 Like
g apka boht shukriya
By: abrish, Sargodha on May, 02 2017
0 Like
Very nice article bhot acha likha hai ap ne
By: Faheem Shayer, Karachi on Jan, 15 2017
Reply Reply
0 Like
Boht shukriya faheeem bhai
By: Abrish anmol, Sargodha on Jan, 16 2017
0 Like
welldone
By: umama khan, kohat on Jan, 14 2017
Reply Reply
0 Like
بہت نوازش
By: Abrish anmol, Sargodha on Jan, 14 2017
0 Like
shukriya sis
By: Abrish anmol, Sargodha on Jan, 13 2017
Reply Reply
0 Like
superb!
By: Abdul Kabeer, Okara on Jan, 13 2017
Reply Reply
0 Like
ok g
By: Abrish anmol, Sargodha on Jan, 16 2017
0 Like
by the way aisy likhty hain (Bhai) Sister G
By: Abdul Kabeer, Okara on Jan, 13 2017
0 Like
Shukriya bahi
By: Abrish anmol, Sargodha on Jan, 13 2017
0 Like
nice topic :)
By: Zeena, Lahore on Jan, 13 2017
Reply Reply
0 Like
shukjriya sis
By: Abrish anmol, Sargodha on Jan, 13 2017
0 Like