اجڑے خواب - قسط 3

(Nadia khan, rawalpindi)
اجڑے خواب جاری ہے
ساحل یک ٹک ماہ رخ کی چہرے کے طرف دیکھا جارہا تھا ۔۔۔۔۔؟؟؟؟؟؟ ماہ رخ اتنا سب کچھ ہونے کی بعد تم اب مجھے بتا رہی ہو ۔ ۔۔۔۔۔۔۔؟؟ ساحل میں اور کیا کرتی ۔؟؟؟؟ میرا موبائل عاشر کے پاس ہے۔۔؟؟ تایا ابو کی یہی آخری فیصلہ ہے ؟؟کی اس اتوار کو نکاح ہوگا۔۔۔؟؟؟؟؟ اور رخصتی بھی اب تم بتاو میں کیا کروں ۔۔۔۔؟؟؟؟ مجھے غصہ بلکہ زیادہ غصہ آرہا ہے حسب عادت وہ فوراً بھڑک اٹھا تھا ۔۔۔۔؟؟ اس عاشر کے بچے کو چھوڑوں گا نہیں میں جان سے ماروں گا ۔۔۔۔؟؟؟ ساحل غصے سے کچھ نہیں ہوگا کچھ سوچو اب ہمیں کیا کرنا چاہئے۔۔۔۔؟؟؟؟؟؟ ماہ رخ تمہیں تو پتا میں تمہیں کسی اور کے ہوتے ہوئی نہیں دیکھ سکتا۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔ ٹھیک ہے ؟؟؟؟؟ میں تمہارے تایا ابو سے بات کرتا ہوں۔۔۔۔۔۔؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟ نہیں ساحل تم تایا ابو سے مت ملو۔۔۔؟؟؟ اگر عاشر کو آپ کے بارے میں پتا چلا۔۔۔۔؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟ وہ تو تمہیں جان سے مار دیں گی۔۔۔۔۔۔؟؟؟؟ نہیں تم مت آناہمارے گھر اس نے بمشکل خود کو رونے سے رکھا ہوا تھا ۔۔ پھر کیا کروں ماہ رخ تم ہی بتاو ساحل کی آواز غصے سے پھٹا جارہا تھا ۔۔۔۔۔؟؟ ۔۔۔۔۔؟؟؟ ماہ رخ نے اپنے آنسو صاف کرتے ہوئے کہا ۔۔۔۔۔۔ ساحل ہمارے پاس ایک راستہ ہیں ساحل نے بے صبری پوچھا کون سا راستہ ۔۔۔۔؟؟؟ ساحل مجھے اپنے ساتھ لے جاو یہاں سے دور بہت دور پھر ہم وہاں پر شادی کرلیے گے ۔۔۔؟؟؟ جاری ہے
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Nadia khan

Read More Articles by Nadia khan: 9 Articles with 19530 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
27 Jan, 2017 Views: 536

Comments

آپ کی رائے
Nice :)
By: Zeena, Lahore on Jan, 29 2017
Reply Reply
0 Like