سو لفظی تلخیاں

(Habib Ur Rehman, )

راشد اپنے ماں باپ کی اِکلوتی اولاد ہے،
باپ پہلے سے ہی فوت ہو گیا ،
بوڑھی ماں اکثر علیل رہتی ہے ،
غربت کا یہ عالم ہے کہ دوسرے وقت
کے لئے چند لقموں کا بندوبست ہوتا ،
خود کو سنبھالا ہی تھا کہ سروس اسٹیشن پر
صفائی کا کام شروع کیا،
مگر پھر بھی گھر میں فاقوں کی اندھیری رہتی ،
ماہِ مقدس شروع ہوا تو سیٹھ نے
پہلے دن ہی پوچھ لیا ۔۔
تم نے روزہ رکھا ہے ؟؟
راشد نے بڑی خوشی و فخر سے جواب دیا،
ہاں،ہاں صاحب رکھا ہے!!
میں تو ہمیشہ روزہ رکھتا ہوں

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Habib Ur Rehman

Read More Articles by Habib Ur Rehman: 3 Articles with 1281 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
05 Jun, 2017 Views: 570

Comments

آپ کی رائے