علی ظفر نے پی ایس ایل کے ترانے کا دوسرا ٹیزر جاری کردیا

پاکستان کے ہر دل عزیز معروف گلو کار علی ظفر نے پی ایس ایل کے ترانے کا دوسرا ٹیزر جاری کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق علی ظفر نے پی ایس ایل فائیو کےگانے کی ویڈیو  شئیر کی جو 22 سیکینڈ پر مبنی ہے۔

Little warm up before recording the Dhols. Jo maza “live” mein hai. Jo maza life hai. Enjoy kerein. #bhaeehazirhai pic.twitter.com/HBFpK9rv76

— Ali Zafar (@AliZafarsays) February 24, 2020

ویڈیو میں علی ظفر کو ڈھول کی تھاپ پر رقص کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔

علی ظفر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر شئیر کی جانے والی ویڈیو کی کیپشن میں لکھا ہے کہ ترانے کے بنانے سے پہلے تھوڑا ’وارم اپ‘ ہونا ضروری ہے۔

اس کے علاوہ ویڈیو کے کیپشن میں علی ظفر نے لکھا ویڈیو کے کیپشن میں انہوں نے ہیش ٹیگ ’بھائی حاضر ہے‘ کا استعمال بھی کیا۔

علی ظفر نے پی ایس ایل فائیو کا ان آفیشل گانا گانے کی  تیاری شروع کر دی

یاد رہے کہ علی ظفر نے ایک پروگرام میں عوام کی ڈیمانڈ پر بنائے گئے پی ایس ایل 5 کے ترانے سے متعلق کہا ہے کہ جب بھائی آگیا ہے تو شاہکار بھی آجائے گا، بڑے کم وقت میں گانا تیار کیا ہے۔

علی ظفرنے کہا کہ میرا نیا گانا سب کے لیے سرپرائز ہوگا ، اب پاکستان سپر لیگ 5 کے لیے میرا یہ نیا گانا بھی سب کو پسند آئے گا، اب ڈانس چیلنج شروع ہونے والا ہے۔

گلوکارعلی ظفر نے پی ایس ایل کا پرانا گانا جو انہوں نے گایا تھا اُس کا ذکر کیا اور کہا کہ  ’’سیٹی بجے گی‘‘ گانا بہت ہی ہٹ گیا تھا۔

علی ظفر نے یہ بھی کہا کہ اگر پاکستانی عوام مشترکہ طور پر یہ چاہتی ہے کہ میں پی ایس ایل کا ترانہ بناؤں تو میں اپنی کوشش کرنے کے لیے تیار ہوں کیونکہ ان کے لیے تو جان بھی حاضر ہے۔

گزشتہ روز قبل پاکستان سُپر لیگ کے سیزن فائیو کی افتتاحی تقریب میں ہونے والی غلطیوں کا غصہ علی عظمت نے علی ظفر پر نکالا تھا جس کا جواب انتہائی مزاحیہ انداز میں علی ظفر نے ایک ویڈیو پیغام کے ذریعے دیا تھا۔

واضح رہے کہ علی ظفر کی آواز میں پی ایس ایل کے  ترانے کا شائقین کرکٹ کو بے صبری سے انتظار ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.