رن وے سے اڑنے والے خلائی جہاز کا منصوبہ

image

ایک ایرو اسپیس کمپنی نے بتایا ہے کہ وہ ایسے خلائی جہاز بنانے والی ہے جو دوبارہ استعمال کیے جا سکیں گے اور انہیں رن وے سے اڑایا اور اس پر اتارا جا سکے گا۔

امریکی ریاست واشنگٹن کے شہر بیلیویو کی مقامی فرم ریڈین ایرو اسپیس نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کے خلائی جہاز، خلاء اور دنیا کے سفر کو مکمل طور پر بدل کر رکھ دیں گے۔

ریڈین ون نامی جہاز جب مکمل ہوگا تو یہ خلائی مدار میں لے جانے والا سنگل اسٹیج جہاز مکمل طور پر دوبارہ استعمال کیا جا سکے گا۔ جہاز کو واپس لانے کے 48 گھنٹے بعد دوبارہ پرواز پر اُڑایا جا سکے گا۔

فنڈ کی مد میں اس کمپنی نے 2 کروڑ 75 لاکھ ڈالرز جمع کیے ہیں اور اس کے لیے مختص کوئی مخصوص بجٹ کے متعلق نہیں بتایا گیا ہے۔ ماہرین کے تخمینے کے مطابق اس کو بنانے کے لیے ایک ارب ڈالرز سے اوپر کی لاگت آئے گی۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ اس جہاز کو بنانے کے لیے سیاحتی مارکیٹ کو مرکزِ نگاہ نہیں بنایا گیا بلکہ اس کو خلاء میں تحقیق، اشیاء سازی اور زمین کے متعلق مشاہدات اکٹھے کرنے کو آسان اور سستا بنانے کی غرض سے بنایا جا رہا ہے۔

ریڈین کا کہنا ہے کہ ان کے دوبارہ استعمال ہو سکنے والے اسپیس کرافٹ کے لیے عمودی لانچ سسٹم کی نسبت کم  انفرااسٹرکچر کی ضرورت ہوگی اور اس کو 48 گھنٹوں میں دوبارہ اڑایا جاسکے گا۔

Square Adsence 300X250


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.