چین کی ٹونگا کو تعمیرات کے لیے مدد کی پیشکش

image

چین کے صدر شی جِن پِنگ نے تباہ کن آتش فشانی کے بعد ٹونگا کے نقصان زدہ حصوں کی دوبارہ تعمیر کی پیش کش کر دی۔

ٹونگا میں گزشتہ ہفتے ہونے والے دھماکے اور اس کے نتیجے میں پیدا ہونے والے سونامی کے سبب تین لوگ ہلاک جبکہ بڑے پیمانے پر مالی نقصان ہوا۔

چین کی جانب سے مدد کی پیش کش اس وقت سامنے آئی ہے جب سائنس دانوں نے خبردار کیا ہے کہ آتش فشاں کی راکھ سمندر کے پانی کے ساتھ مل کر صحت اور ماحولیات کے لیے زہر آلود ہو سکتا ہے۔

ناسا کی جانب سے تحقیق کرنے والے کورنیل یونیورسٹی کے سائنس دانوں کی ٹیم نے نتیجہ اخذ کیا کہ اس میں پینے کا پانی آلودہ ہونا، صحت کو در پیش بڑے اور دائمی خطرات کے ساتھ چھوٹے پیمانے پر زراعت کو خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔

پروجیکٹ کے ایک محقق نے ایڈریان ہورنبی نے کہا کہ دھماکے کے دوران بڑے پیمانے پر کلورین کا اخراج ہوا اور جب یہ میگما کی گیسز کے ساتھ ملی، اس نے ممکنہ طور پر مہلک کاک ٹیل بنالیا۔

ہورنبی کا کہنا تھا کہ ہُونگا-ٹونگا ہُونگا ہااپائی پر کی جانے والی پچھلی تحقیقیں یہ بتاتی ہیں کہ راکھ میں نمک کے موجودگی اب تک ریکارڈ کی گئی مقدار سے سب سے زیادہ ہے۔ جس میں شاید انتہائی زہریلی اقسام جیسے کہ گندھک، کلورین اور فلورین ہو سکتی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ نمک راکھ میں ذخیرہ ہو جاتے ہیں اور بارش میں با آسانی رس جاتے ہیں جس کے سبب پانی کے معیار، زراعت اور قدرتی ماحول کو فوری خطرات لاحق ہو جاتے ہیں۔

Square Adsence 300X250


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
عالمی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.