دھوبی کے کتے

(Anees Ur Rehman Aneeq, )

ایک ہی صاحب ایک طرف اس حملہ کو طالبان سے منسوب کر رہے ہیں اور مقصد اسے دھشت گرد حملہ قرار دینا ہی ہے۔۔۔
اور دوسری ہی پوسٹ میں اس حملہ کا ایک جواز بھی پیش کر رہے ہیں۔۔۔
او دھوبی کے کتو۔۔۔!
گھر کے نہیں رہتے ہو تو گھاٹ کے تو بنو۔۔۔
یہی حملہ اگر طالبان کریں تو وہ دھشت گرد، ظالمان اور پتا نہیں کیا کیا کہلائیں؟؟؟
لیکن وہی حملہ چند مٹھی بھر پلانٹڈ اور پیڈ لوگ کریں تو وہ آزادی پسند۔۔۔
حالانکہ تحریک طالبان پاکستان اور بلوچ لبریشن آرمی کے ان داتا ایک ہی ہیں۔۔۔
دونوں ہی ایک ہی جگہ سے پلانٹڈ اور پیڈ ہیں بس فرق یہ ہے کہ ایک طبقہ مذھب کا لبادہ اوڑھ کے اپنا اُلّو سیدھا کر رہا ہے۔۔۔
اور دوسرا طبقہ وہ لوگ جو مذھب بیزار ہیں ان لوگوں میں سرایت کر کے ملک دشمنی پر ابھار رہا ہے اور نام آزادی کا لیا جا رہا ہے۔۔۔
ہاں آج ملی ہے نا ان تین کتوں کو آزادی۔۔۔
اس دنیا سے آزادی۔۔۔
اس دنیا کے جھنجھٹوں سے آزادی۔۔۔
مِسّنگ پرسن کی فہرست سے آزادی۔۔۔
ارے جب ان کو آزادی مل ہی گئی تو پھر روتے کیوں ہو؟؟؟
آج مردار ہونے والے کتوں کے پیچھے رونے والا شاید کوئی بچا ہی نہ ہو۔۔۔
لیکن یہ موم بتی مافیا کے لبرل لوگ شاہ سے زیادہ شاہ سے وفاداریاں دکھانے میں پھرتی دکھا گئے ہیں اور ان سے اظہار ہمدردی کر رہے ہیں۔۔۔
اور پھر انھی لوگوں کے لواحقین ہی انکی تصویریں لیکر جگہ جگہ مِسّنگ پرسنز کے بورڈز تھامے احتجاج کرتے نظر آتے ہیں۔۔۔
ارے جہاں طالبان حکومتی رٹ کو چیلنج کر رہے تھے وہاں یہی لوگ بھی اسی حکومتی رٹ کو چیلنج کر رہے ہیں۔۔۔
اُن سے نفرت اور اِن سے ہمدردی چہ معنی دارد؟؟؟؟

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Anees Ur Rehman Aneeq

Read More Articles by Anees Ur Rehman Aneeq: 2 Articles with 1682 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
26 Nov, 2018 Views: 997

Comments

آپ کی رائے
دیکھنا تقریر کی لذت کہ جو اس نے کہا
میں نے یہ جانا گویا یہ بھی میرے دل میں ہے
By: Saleem Ullah Shaikh, Karachi on Nov, 26 2018
Reply Reply
0 Like
بات ٹھیک ہے لیکن الفاظ بہت سخت ہیں۔ اگر سخت الفاظ کے بجائے تھوڑا نرم الفاظ میں یہی بات کہی جائے تو میرے خیال میں زیادہ موثر ہوگی۔
اہم بات یہ ہے کہ اگر آپ بھی ان لبرل اور موم بتی مافیا کی طرح کے الفاظ استعمال کریں تو پھر ان میں اور آپ میں کیا فرق رہ جائے گا۔
By: Saleem Ullah Shaikh, Karachi on Nov, 26 2018
Reply Reply
0 Like