شب برات اور ماں کا پیار

(Azra Faiz, Wah)

شب برات کی تیاری کرلی۔۔۔کچھ سامان اور چاہیے ہو تو بتادو۔۔۔۔دیکھو کچھ رہ نہ جاۓ ۔۔۔۔۔سارے محلے میں میٹھا بھیجنا اور چودھری صاحب اور کچھ اور گھروں میں دیسی گھی کا حلوا بھیج دینا۔۔۔۔ ٹھیک ہے آپ فْکر نہ کریں ۔۔۔میں سب کرلونگی۔۔۔۔آپ بس ڈرائی فروٹ لادیں ۔۔۔۔باقی سب کچھ تیار ہے۔۔۔بابا میں نے پٹاخے لینے ہیں۔۔۔اچھا ۔۔۔اچھا ۔۔۔ٹھیک ہے یار لے لینا۔۔۔۔مجھے ذرا میسیج کرنے دو۔۔۔۔ سنئے گا۔۔۔۔ذرا میرے موبائل پہ شب برات کا سٹیٹس لگا دیں۔۔۔اور مبارکبادی اور اس رات کی برکت کے لیئے دعا کرنے کا سب کو میسج کردیں۔۔۔۔اچھا۔۔اچھا ۔۔۔تم حلوے پر فوکس رکھو۔۔۔۔میں کر دیتا ہوں۔۔۔۔ارے ہاں مدرسے میں بھی تو حلوا جانا ہے لسٹ میں لکھ لیں۔۔۔۔شاہینہ نے شوہر کو یاد دلایا۔۔۔۔ممّا ۔۔۔مما ۔۔۔دادو کا فون آرہا ہے ۔۔۔۔حسن نے موبائل ماں کی طرف بڑھایا ۔۔۔۔اوہو۔۔۔چھوڑو ۔۔۔ڈھیروں کام پڑا ہے ۔۔۔یونہی بہت بولتی ہیں۔۔۔۔بابا کو بھی کر رہی ہونگیں ۔۔۔بابا کو بولو ۔۔۔نہ اٹھائیں ۔۔۔سارا کام رہ جاۓ گا۔۔۔۔ضرور پیسے چاہیۓ ہونگے۔۔۔۔اکیلی رہتی ہیں ۔۔۔پتا نہیں کیا کریں گی اتنا پیسہ۔۔۔۔۔

لسٹ دکھاؤ۔۔۔ہاں باقی تو سب ہوگیا۔۔۔۔بچوں کا صدقہ دینا ہے۔۔۔۔ہاۓ اتنی بڑی رات ہے ۔۔۔۔اللہ ہماری بخشش کرے۔۔۔۔سنیں جی ۔۔۔پیر صاحب کے لیۓ نذرانے بھجوا دیئے۔۔۔۔دیکھ لیں ۔۔۔اللہ تعالیٰ نیک لوگوں کی سنتا ہے۔۔۔۔شاہینہ ایک ذمہ دار بیوی کی حیثیت سے سب کام یاد دلا رہی تھی۔۔۔۔سب کچھ ہوگیا ہے ۔۔۔فکر نہ کرو۔۔۔اب ذرا دیر کو چپ ہونا مجھے کچھ فون کرنے ہیں۔۔۔۔ہیلو۔۔۔ جی سر کیسے ہیں ۔۔۔ہاں جی ۔۔۔آپ کو بھی مبارک ہو ۔۔۔اگر کوئی غلطی ،کوتاہی ہوئی ہو تو معاف کردیجیۓ گا اور ہمارے لیۓ خاص دعا کیجیۓ گا ۔۔۔اپنی اماں جان سے بھی خصوصی دعا کا کہیۓ گا ۔۔۔بزرگوں کی دعاٖئیں اللہ رب العزت سنتا ہے۔۔۔جی بلکل۔۔آمین ۔۔آمین۔۔۔سنیۓ سب کو فون کرنے کے بعد میری بات سنیئے گا۔۔۔۔شاہینہ یہ کہہ کر کچن میں چلی گئی۔۔۔۔

دن کے بارہ بجے سب سو کر اٹھے ۔۔۔۔وہ بھی فون کی گھنٹی سے۔۔۔دوسری طرف اس کی سہیلی تھی۔۔۔کل کی روداد سنا رہی تھی ۔۔۔۔شاہینہ نے بھی اپنے نوافل کی تعداد بتائی ۔۔۔۔اس کی سہیلی نے بتایا کے اس کے پانچ سال کے بچے نے بھی روزہ رکھا ہے۔۔۔شاہینہ نے اسے بتایا کہ میرا شوہر اور بیٹا پوری رات مسجد میں عبادت کرتے رہے۔۔۔اسکی دوست نے بیچ میں ٹوں ۔۔ٹوں کرتی آواز کا پوچھا تو شاہینہ نے موبائل سکرین پر دیکھا ۔۔۔ایک تو میری ساس کو چین نہیں۔۔۔

افطار پارٹی کی تقریب سے فارغ ہو کر احمد نے سکون کا سانس لیا ۔۔۔۔اف تھک گیا۔۔۔۔۔۔۔میں بھی تھک گئی لیکن اللہ کی خوشنودی حاصل ہوجاۓ۔۔۔بس۔۔۔پورا محلہ تعریف کر رہا تھا ۔۔۔میں نے جو راشن بانٹا تھا مسز خان اپنے گیٹ سے دیکھ رہی تھی۔۔۔۔ان کو بھی پتا چلا ہوگا ۔۔۔۔۔اللہ والی صرف وہ اکیلی نہیں۔۔۔۔۔

بابا۔۔۔بابا۔۔۔۔میسج آیا ہے ۔۔موبائل پر گیم کھیلتا ہوا حسن دوڑتا ہوا آیا۔۔۔۔احمد نے میسج پڑھا ۔۔۔۔میسج اولڈ ہاؤس سے تھا۔۔۔۔آپ کی والدہ انتقال کر چکی ہیں۔۔۔ان کوکل رات ہارٹ اٹیک ہوا ہے۔۔۔۔۔ڈیڈ باڈی کے ساتھ انہوں نے ایک لفافہ دیا۔۔۔۔احمد نے کھولا۔۔۔۔اس پر لکھا تھا۔۔۔۔شب برات گزر گئی۔۔۔ میں نے اپنے بیٹے سے مبارکباد کہنا تھا۔۔۔

 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: azra faiz

Read More Articles by azra faiz: 39 Articles with 44710 views »
I belong to a baloach family .I born in a village ,got my primary education under a tree and higher education from the well reputed institute in Karac.. View More
19 Apr, 2019 Views: 874

Comments

آپ کی رائے