صاف پتہ چل رہا ہے کہ یہ --- وہ 7 عادات جو ظاہر کرتی ہیں کہ آپ متوسط گھرانے سے تعلق رکھتے ہیں

بدقسمتی سے دنیا میں سب ہی لوگ منہ میں سونے کا چمچ لے کر پیدا نہیں ہوتے- متعدد افراد کے گھرانوں میں قلیل آمدنی کی وجہ سے مالی پریشانی ہوتی ہے- یہاں تک کہ مختلف گھرانوں میں پائی جانے والی اس مالی پریشانی کے اثرات ایسے گھرانوں سے تعلق رکھنے والے افراد میں ساری زندگی پائے جاتے ہیں جو کہ ان کی عادات و اطوار سے ظاہر ہوتے ہیں-
 
کھانے کے بارے میں فکرمند
خوراک اور غذائیت کے بارے میں مستقل خدشات ان مخصوص نشانیوں میں سے ایک ہے جن سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ آپ ایک ایسے خاندان سے تعلق رکھتے ہیں جسے پیسے یا آمدنی کے حوالے سے پریشانی کا سامنا ہے۔ متوسط طبقے کے افراد اسی وجہ سے کئی کئی دن پرانا کھانا بھی محفوظ رکھتے ہیں جو کہ اپنی صحت کے ساتھ سمجھوتا ہے-
 
کچھ بھی نہیں "اضافی" خریدنا
متوسط طبقے میں پرورش پانے والے افراد اکثر خریداری کے موقع پر دباؤ کا شکار نظر آتے ہیں- اکثر یہ وہ لوگ ہوتے ہیں جو "تاخیر سے خریداری" کے قاعدے کو استعمال کرتے ہیں، اسی کے مطابق کوئی اہم شے خریدنے سے پہلے کچھ دن انتظار کرنے کو ترجیح دیتے ہیں۔ ہر بار شاپنگ کرتے وقت غیر ضروری یا اضافی سامان خریدنے سے گریز کرتے ہیں جو کہ ایک اچھی عادت بھی ہے-
 
ملازمت کھونے کا خوف
ایسے افراد میں ملازمت کھونے کا غیر معقول خوف عام پایا جاتا ہے کیونکہ یہ بچپن سے ہی یہ سمجھتے ہیں کہ آپ مستحکم آمدنی کے بغیر زندہ نہیں رہ سکتے ، چاہے وہ کتنی کم ہی کیوں نہ ہو۔
 
آپ کا چیزیں تھامنے کا انداز
کچھ ایسی عام عادات بھی ہیں جو کسی فرد کے متوسط طبقے سے تعلق کو ظاہر کرتی ہیں اور امیر افراد یا پھر سیلز مین بخوبی ان افراد کو پہچان جاتے ہیں- آپ کس طرح سے حرکت کرتے ہیں ، بات کرتے ہیں ، اشارہ کرتے ہیں ، کھاتے ہیں ، اور یہاں تک کہ ایک کپ کافی رکھتے ہیں آپ کی زندگی کے بارے میں بہت کچھ بتا سکتا ہے۔
 
معجزے کی امید
وہ لوگ جو کبھی پیسوں کی پریشانی نہیں رکھتے ہیں وہ لاٹریوں کو تفریح کے طور پر استعمال کرتے ہیں۔ یقیناً، وہ جیت سے بھی خوش ہیں اور ناکامیوں سے مایوس ہوتے ہیں۔ لیکن صرف متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے افراد ہی حقیقی معنوں میں جذبے اور معجزے کی امید کے درمیان فرق کو سمجھتے ہیں۔
 
ہر کام خود سے کرنا
ایسے افراد کی ایک نشانی یہ بھی ہوتی ہے کہ یہ گھر کے مختلف کام خود ہی سرانجام دیتے ہیں- مثال کے طور پر خراب تالے بدلنا، لیک نلکوں کو ٹھیک کرنا ، ٹائلیں جوڑنا اور مختلف خراب اشیاﺀ کی مرمت کرنا- اور یہ عادت بعض اوقات بہترین بھی ثابت ہوتی ہے-
 
چیزیں سنبھال کر رکھنے کی عادت
جو لوگ پیسے کی قدر جانتے ہیں وہ شاذ و نادر ہی چیزوں کو پھینکتے ہیں اور اپنی استعمال کی اشیاﺀ کی زندگی کو ہر ممکن طریقے سے طول دینے کی کوشش کرتے ہیں۔ یہاں تک کہ اگر ان کے کپڑے اب گھر سے باہر پہننے کے لئے موزوں نہیں ہیں تو، وہ انہیں گھر اندر پہننے کے کپڑوں میں تبدیل کر دیتے ہیں۔
Most Viewed (Last 30 Days | All Time)
04 Jan, 2021 Views: 65079

Comments

آپ کی رائے