ویلنٹائن ڈے (سو لفظوں کی کہانی )

(Saqlain Mushtaq, )
کل تم سے میں نے اپنی انمول محبت کا اظہار کرنا ہے ۔
کل ویلنٹائن ڈے ہے ۔
تم سرخ ساڑھی میں ملبوس ہوکر شہر سے باہر والے مںا پارک آنا ۔
اور اچھا یہ بتاوْ کہ گلاب کے پھول کے گلاستہ کے علاوہ تمھارے لیے کیا گفٹ لوں ؟
وہ اپنی محبوبہ سے موبائل پر بات کررہا تھا ۔
آج وہ اپنی محبوبہ کے ساتھ ویلنٹائن ڈے منا کر گھر آیا اور اماں سے پوچھا
بہن کدھر ہے ؟
اماں بولی !
وہ تو صبح سے سرخ جوڑا لگا کر گھر سے نکلی ہے بول رہی تھی آج کوئی خاص دن ہے ۔
 
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Muhammad Saqlain Mushtaq

Read More Articles by Muhammad Saqlain Mushtaq: 12 Articles with 6550 views »
student of chemical engineering at national university of science and technology ( NUST) . Article and column writer ... View More
14 Feb, 2017 Views: 476

Comments

آپ کی رائے
بچے محبت کرتے ہیں یہاں وہاں ملتے ہیں بات شادی تک آئے تو گھر تک رشتہ بھی جاتا ہے مگر والدین ضد اور انا کے چکر میں بچوں کی زندگی سے کھیلتے ہیں اور کچھ محبت کے نام پر عزت و ناموس سے کھیلتے ہیں محبت کو بدنام اورتماشہ بنا کر رکھ دیا گیا ہے اورسب سمجھتے ہیں کہ محبت گناہ ہے کاش ایسے لوگ سمجھ سکیں کہ محبت گناہ ہو سکتی ہے مگر نکاح نہیں ہے تو کیوں محبت کرنے والوں کو نکاح میں نہیں آنے دیا جاتا ہے۔
By: Zulfiqar Ali Bukhari, Rawalpindi on Feb, 20 2017
Reply Reply
0 Like
Very nice,,,,,,,,,,,,,,,,,,,,,,,,
By: Mini, mandi bhauddin on Feb, 14 2017
Reply Reply
0 Like