جھوٹے گواہوں نے نظام عدل کو خراب کر ديا،چیف جسٹس

سپريم کورٹ نے قتل کے مجرم کی اپیل پر سماعت کے دوران جھوٹی گواہی دينے پر دو افراد کو طلب کر لیا جبکہ لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دے کر عمر قید کا ملزم بری دیا گیا۔

سپریم کورٹ ميں قتل کے مجرم کی اپیل پر سماعت کے دوران چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کے دو ٹوک ریمارکس دیئے کہ جھوٹے گواہوں کو اب نہیں چھوڑیں گے، اُنہوں نے نظام عدل کو خراب کر دیا ہے قانون میں قتل کے مقدمے میں جھوٹی گواہی کی سزا عمر قید ہے، اس کیس میں گواہان ظفر عباس اور مقصود حسین موقع پرموجود نہیں تھے دونوں نےخود سے کہانی بنا کر پیش کی۔

عدالت نے جھوٹی گواہی کی بنیاد پر لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے ملزم ذوالفقار حسین شاہ کو بری کر دیا، دونوں گواہوں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 28 اکتوبرکو طلب کرلیا، ڈی پی او سرگودھا کو دونوں کی حاضری یقینی بنانے کی ہدايت کردی گئی۔

سپریم کورٹ اس سے پہلے بھی دو جھوٹے گواہان کے مقدمات ٹرائل کیلئے بھجوا چکی ہے، سرگودھا میں اقرار حسین شاہ نامی شخص کو 2011ء میں چھریا مار کر قتل کیا گیا تھا۔

ٹرائل کورٹ نے دو ملزمان میں سے ذوالفقار کو سزائے موت دی اور جبکہ جعفر شاہ کو بری کیا، ہائیکورٹ نے ذوالفقار کی سزائے موت عمر قید میں بدل دی تھی۔

 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.