کهسرا کون؟

(Mona Shehzad, Calgary)

دائمہ نے تخلیق کے سخت مرحلے سے گزر کر جب ایک ننھی سی رونے کی آواز سنی تو سکون سے آنکھیں موند لیں. تهوڑی دیر بعد جب اس نے نرس سے بچے کو دیکهنے کی خواہش کا اظہار کیا تو اس نے گھبرا کر اس کے میاں کو آواز دے دی. اس کا میاں جب اندر آیا تو اس کا رنگ کفن کی طرح سفید ہورہا تھا. اس نے ہکلا کر دائمہ سے کہا کہ نومولود جس کی امانت تها وہ لے گئے ہیں. دائمہ کو اپنے کانوں پر شک گزرا. اس نے چیخ کر پوچھا :
"میرا بچہ کون لے گئے؟ "
اس کے خاوند نے شرمندگی سے سر جھکا کر کہا :
"کهسرے "
 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Mona Shehzad

Read More Articles by Mona Shehzad: 4 Articles with 1486 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
06 Apr, 2018 Views: 335

Comments

آپ کی رائے