دیہاتوں میں تعلیمی نظام

(فضل عظیم, Karachi)

اگر ہم دیہاتوں کے نظام تعلیم پر ایک نظر ڈالیں تو ہمیں اس بات کا اندازہ ہوجائے گا کہ ہمارے دیہاتوں کا تعلیمی نظام کتنا بگڑ چکا ہےدیہات کے اسکولوں میں نہ تو استاد کی خاضر ی ہوتی ہے اور نہ ہی طلباء و طالبات ہوتے ہیں کیونکہ ان کے لیے تو نہ کوئی قانون ہے نہ زمیداری کا احساس اورنہ ہی قانون ان کے بارے میں کوئی خبر پوچھتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ دیہاتوں کی نظام میں بہتری نہیں آ رہی۔

جس کی وجہ سے ہمارے دیہاتوں میں رہنے والے نوجوان تعلیم سے محروم رہ جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ اگر ہم دیہاتوں کے زیادہ تر اسکولوں میں نظر ڈالیں تو وہاں کے اسکولوں میں لوگ اپنی بیھڑ بکریاں باندھتے ہیں ہم حکومت پاکستان سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ دیہاتوں کی تعلیمی نظام پر ایکشن لے تاکہ دیہاتوں کے بچے بھی تعلیم یافتہ ہوں اور اپنے ملک پاکستان کا نام روشن کرسکیں۔

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: فضل عظیم

Read More Articles by فضل عظیم: 2 Articles with 478 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
26 Sep, 2020 Views: 225

Comments

آپ کی رائے