عمران خان بہترین کپتان قرار

وزیراعظم پاکستان عمران خان کو عالمی سطح پر کرکٹ کی دنیا کا بہترین کپتان قرار دے دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے شائقین کرکٹ کیلئے دنیائے کرکٹ کے چار بہترین کپتانوں کے حوالے سے ٹوئٹر پرایک پول جاری کیا، جس میں اب تک  47 فیصد  سے زائد ووٹ حاصل کرنے کے بعد عمران خان بہترین کپتان بن گئے۔

آئی سی سی کی ٹوئٹ میں بین الاقوامی کرکٹ کے نگراں ادارے نے تین مرد اور ایک خاتون کرکٹر کو شامل کرتے ہوئے پول میں پوچھا کہ آپ کی نظر میں کونسا کپتان بہترین ہے۔

Captaincy proved a blessing for some extraordinary cricketers 🧢🏏

Their averages improved as leaders 📈

You decide which of these ‘pacesetters’ were the best among these geniuses! pic.twitter.com/yWEp4WgMun

— ICC (@ICC) January 12, 2021

آئی سی سی نے جن چار کرکٹرز کے نام دیے ، ان میں بھارت کے ویرات کوہلی، جنوبی افریقہ کے اے بی ڈی ویلیئرز، آسٹریلوی خاتون کرکٹر میگ لیننگ اور پاکستان کے سابق کپتان عمران خان شامل ہیں۔

 

آئی سی سی نے پولنگ میں لوگوں سے پوچھا کہ وہ یہ فیصلہ کریں کہ ان چاروں میں سے کس نے کپتان بننے کے بعد بہترین کارکردگی دکھائی ہے۔

 24 گھنٹوں کے لیے جاری کیے گئے پول میں 5 لاکھ 36 ہزار سے زائد لوگوں نے حصہ لیا اور عمران خان کو بہترین کپتان قرار دیا۔

Lastly, Imran Khan, one of Pakistan’s greatest and leader of the 1992 @cricketworldcup triumph 🌟 pic.twitter.com/LyrZiybD4y

— ICC (@ICC) January 12, 2021

عمران خان کے بعد دوسرے نمبر پر بھارتی کرکٹ ٹیم کے موجودہ کپتان ویرات کوہلی 46 فیصد ووٹ حاصل کر سکے۔

واضح رہےکہ عمران خان کپتان بننے سے قبل ٹیسٹ میں بیٹنگ میں 25.43 کی اوسط رکھتے تھے جبکہ بولنگ میں ان کی اوسط 25.53 تھی، لیکن کپتان بننے کے بعد بیٹنگ اوسط بہتر ہوکر52.34 ہوگئی جبکہ بولنگ اوسط میں بھی زبردست بہتری آئی اور وہ 20.26 فیصد ہو گئی۔

عمران خان کی قیادت میں ہی پاکستانی ٹیم کی سب سے بڑی جیت 1992 کا عالمی کپ ہے۔

-->

 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.

196