چمن: پاک افغان سرحد کھولنے سے متعلق مذاکرات بےنتیجہ

image

چمن میں پاک افغان سرحد کھولنے کے لیے پاکستانی اور افغان حکام کے درمیان ڈیڈلاک تاحال برقرار ہے۔

گزشتہ روز پاک افغان سرحد دوبارہ کھولنے کے حوالے سے مذاکرات ہوئے۔ پاکستانی وفد کی قیادت ایڈیشنل چیف سیکریٹری ارشد مجید جبکہ افغان طالبان کی قیادت گورنر یوسف وفا نے کی۔

حکام کے مطابق کئی گھنٹے کے مذاکرات کا کوئی بھی نتیجہ نہیں نکل سکا۔

اس سے قبل چمن پاک افغان سرحد کی بندش کی وجہ سے چمن بارڈر پر پھنسے ہوئے افغان مسافروں نے ڈپٹی کمشنر آفیس کے سامنے احتجاج بھی کیا۔ مسافروں نے افغان سرحد کو دوبارہ کھولنے اور ان کو واپس افغانستان جانے کا مطالبہ کیا۔

چمن پاک افغان سرحد کو افغان حکام کی جانب سے سرحد پر پیدل چلنے والوں کے لیے سرحد پار کرنے کے طریقہ کار پر اعتراض کیا گیا تھا جس پر دو ہفتے قبل پاک افغان چمن بارڈر کو مکمل طور پر تجارت اور پیدل چلنے والوں کے لیے بند کر دیا تھا جو تاحال بند ہے۔

پاک افغان سرحد کی بندش کی وجہ سے سرحد کے دونوں طرف ہزاروں کی تعداد میں پاکستانی و افغانی مسافر پھنسے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے مسافروں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے اور سرحد پر کسی کو آنے یا جانے کی اجازت نہیں ہے۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.