Latest Reviews

 پچھلے پہر کی رات ڈراتی رہی مجھے


اصلاحی۔۔۔۔۔۔۔۔
پچھلے پہر کی رات ڈارتی رہی مجھے۔
کسی اجنبی کی یاد ستاتی رہی مجھے۔
سوئی ہوئی تھی میں گل کی گود میں۔
تتلی تمہارے شعر سناتی رہی مجھے۔
اب تک تیرے پیار کی وہ لذت نہیں گئی۔
ہر وقت سینے سے جو لگاتی رہی مجھے۔
دیکھا تو اسکی آنکھون میں تصویر تھی میرے۔
وہ زندگی کے سہانےخواب دکھاتی رہی مجھے۔
ہر دم میں اس کے عشق کا شعلہ بنی رہی۔
غم ہجر میں اسکی یاد جلاتی رہی مجھے۔
وشمہ میں اس کے ساتھ تھی فصل بہار سے۔
خوشبوء کلی سی بن وہ سجاتی رہی مجھے۔

By: ASAD, MPK on Mar, 25 2021

 ہجر کے صدمے سہنا آسان نہیں ہوتا سرکار!

جانکَنی کےعذاب سے گزرنا پڑتا ہے بار بار

By: Uzma, Lahore on Mar, 24 2021

 تیرے خیر خواہ ، تیرے ہم راز آگئے

ترکش، کمان لے کے تِیر انداز آگئے

By: Uzma, Lahore on Mar, 17 2021

 مَن اپنا لا پتہ ہے

من اپنا لا پتہ ہو گیا ھے۔۔۔
نجانے کہان کھو گیا ھے ؟۔
بارہا ڈھونڈھتا ہون اسے مگر !!!۔
نہین پایا کہین شاید گم ہو گیا ھے
تم کو مل جائے اگر تو بتلا دینا۔۔۔
ہان ہمین ایک آواز فقط لگا دینا۔۔۔

By: ASAD, MPK on Mar, 15 2021

 اَب ہمیں خواب دیکھنے کی عادت نہیں رہی ہے

اَب ہمیں خواب دیکھنے کی عادت نہیں رہی ہے
کیونکہ اَب خواب دیکھنے کی عمر گزر رہی ہے

By: Uzma, Lahore on Mar, 15 2021