تیل اورگیس سےہیراتیار

ماہرین نےمصنوعی طورپرتجربہ گاہ میں ہیرابنانےکاکامیاب تجربہ کرلیاہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کےمطابق اس ہیرےکی تیاری میں ماہرین نےگیس اورخام تیل میں موجود ایک مالیکیول کو بطور بنیاداستعمال کیا ہے۔

 اسٹینفرڈ یونیورسٹی کے ماہرین نےایک کم خرچ اورآسان طریقہ اختیارکیا ہے جس کے تحت تجربہ گاہ میں آسانی سے مصنوعی ہیرا تیارکیاگیا ہے۔

اس پرکام کرنےوالی پروفیسرسلگے پارک کاکہناہےکہ یہ ایک صاف وشفاف سسٹم ہےجس میں صرف ایک ہی شےکو خالص ہیرے میں بدلا گیا ہےاوراس میں کوئی عمل انگیز (کیٹے لسٹ) استعمال نہیں کیا گیا ہے۔

ماہرین کے مطابق سب سے پہلے پیٹرول کی ٹنکیوں سے صاف شدہ پاؤڈر نکالا گیا اور اسے طاقتور خردبین کے نیچے دیکھا گیا ۔ ماہرین نے نوٹ کیا کہ اس کے اندر کے ایٹم عین اسی طرح ترتیب میں ہیں جس طرح ہیرے کے اندر ان کی تشکیل ہوتی ہے۔ تاہم روایتی ہیروں کے برخلاف یہ بہت باریک ہیں اور خالص کاربن پر مشتمل ہیں۔ ان کے اندر ہائیڈروجن بھی موجود ہے۔

اسے بنانے کے لیے سفوف کو پہلے لیزر سے گرم کیا گیا اور کئی اقسام کے ٹیسٹ سے گزارا گیا۔ اس طرح ہائیڈروجن غائب ہوئی اور 627 درجے سینٹی گریڈ پر ایٹم ایک خاص ترتیب میں آکر ہیرے کی شکل اختیار کرگئے۔

تاہم یہ ہیرے بہت چھوٹے اور باریک ہیں جن کا مقصد تحقیقی ہی ہوسکتا ہے ۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.