فیٹف کا تین روزہ اجلاس پیرس میں جاری

image

فائل فوٹو

انسدادِ منی لانڈرنگ کے عالمی ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (فیٹف) کا تین روزہ اجلاس 19 تا 21اکتوبر پیرس میں جاری رہے گا جس میں پاکستان کا نام گرے لسٹ میں رکھنے یا نکالنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔

اجلاس میں منی لانڈرنگ، ٹیرر فنانسنگ کیخلاف اقدامات میں پیش رفت کا جائزہ لیا جا رہا ہے، فیٹف ٹیم پاکستان کی جانب سے ٹیرر فنانسنگ سمیت اب تک کی کارکردگی اور پاکستان کے زمینی حقائق اور قانون سازی کا جائزہ لے گی۔

پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے یا نہ نکالنے کا حتمی فیصلہ جائزہ کے بعد ہوگا۔ اسکے علاوہ رئیل اسٹیٹ، جیولرز، وکلاء، اکاؤنٹنٹس جیسے پیشوں کی نگرانی میں پیش رفت کا جائزہ لیا جائے گا

 پاکستان نے فیٹف کے 27 نکاتی ایکشن پلان میں سے اب تک 26 نکات پر عمل کیا ہے۔ پاکستان کو تمام پوائنٹس پر مکمل عمل درآمد یقینی بنانا ہوگا۔ فیٹف ٹیرر فنانسنگ میں ملوث افراد کیخلاف مقدمات اور سزاؤں میں تیزی لانے پر زور دے رہا ہے۔

پیش رفت میں منی لانڈرنگ کی تحقیقات، سزاؤں، ملزمان کے اثاثے ضبط کرنے جیسے اقدامات بھی شامل ہیں۔ پیش رفت کی بنیاد پر نام گرے لسٹ سے نکالنے یا برقرار رکھنے سے متعلق فیصلہ ہوگا۔ نام گرے لسٹ سے نکالنے سے پہلے فیٹف کی تکنیکی ٹیم پاکستان کا دورہ کر سکتی ہے یا پھر پاکستان کو چند ماہ کی مزید مہلت دی جا سکتی ہے۔

واضح رہے پاکستان جون 2018 سے ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں ہے۔

فیٹف کیا ہے؟

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس آن منی لانڈرنگ ایک عالمی ادارہ ہے جو جی سیون ممالک (امریکا، برطانیہ، کینیڈا، فرانس، اٹلی، جرمنی اور جاپان) کی ایما پر بنایا گیا ہے، اس ادارے کا مقصد ان ممالک پر نظر رکھنا اور اقتصادی پابندیاں عائد کرنا ہے جو دہشت گردی کے خلاف عالمی کوششوں میں تعاون نہیں کرتے اور عالمی امن کے لیے خطرہ قرار دیے گئے دہشت گردوں کے ساتھ مالی تعاون کرتے ہیں۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.