قومی اسمبلی نے ضمنی مالیاتی بل2021 کی منظوری دے دی

image

قومی اسمبلی نے اپوزیشن کی ترامیم کو مسترد کرتے ہوئے  مالی ضمنی بل 2021 کی کثرت رائے سے منظوری دیدی۔

اجلاس کے دوران فنانس ترمیمی بل پر اپوزیشن کی ترامیم پر تحریک کے حق ميں150ووٹ آئے جبکہ مخالفت ميں 168ووٹ پڑنے پر اپوزیشن کی ترامیم مسترد ہوگئیں۔

بل کی منظوری کے بعد وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ایک بارپھرثابت ہوا کہ حکومت کی اکثریت ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کی قیادت کبھی بچہ پارٹی کے پاس ہوتی ہے تو کبھی پیٹ پھاڑنے والوں کے پاس ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ چوں چوں کامربہ ہیں ان کاروزانہ لیڈر اور پالیسی تبدیل ہوجاتی ہے۔

اجلاس سے اظہار خیال کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کا کہنا تھا کہ عمران خان غریب کو موت کے منہ میں دھکیل کر ملک کو تباہی کی طرف لے جارہے ہيں۔

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کے بلدیاتی انتخابات میں تحریک انصاف کو انہی اقدامات کے باعث شکست ہوئی ہے۔

رہنما ن لیگ شاہد  خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ يہ نہ بتائيں کونسی چيزيں مہنگی ہونگی،يہ بتائيں سستا کيا ہوگا، آپ کے ريونيو ميں کمی آگئی يا اخراجات بڑھ گئے۔

اجلاس کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے وزیرخزانہ شوکت ترین کا کہنا تھا يہ ٹيکس کاطوفان نہيں صرف ڈاکومنٹيشن ہے۔

وزیرخزانہ کا کہنا تھا کہ واویلا مچار ہے ہیں کہ غریب تباہ ہوگیا حالانکہ ڈبل روٹی اور دودھ سے بھی ٹيکس ختم کرديا جبکہ بیکری اشیاء، دودھ، سولرپینلز اور لیپ ٹاپ پرٹیکس نہیں لگا رہے۔

انہوں نے کہا کہ 6 ہزار ارب روپے کا ٹیکس جمع کیا جبکہ700 ارب روپے کے ٹیکسز کو 350ارب پر ليکر آئے۔

شوکت ترین کا کہنا تھا کہ 280 ارب روپےریفنڈ ہو جائیں گے صرف70ارب روپے کے ٹیکس لگائے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ براہ راست ٹیکسوں میں اضافےکامطلب آمدن بڑھ رہی ہے۔

اس سے قبل وزیراعظم کی ایون میں آمد پر اپوزیشن اراکین نے شدید نعرے بازی کی جبکہ حکومتی اراکین نے ڈيسک بجا کر وزيراعظم کا استقبال کیا۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.