قومی ایئر لائن کے امور چلانے کا اختیار بورڈ آف گورنرز کے سپرد

اسلام آباد:(21 جنوری 2020)سپریم کورٹ نے پی آئی اے کے امور چلانے کا اختیار بورڈ آف گورنرز کو سونپ دیا،سی ای او ایئرمارشل ارشد محمود ملک کی کام جاری رکھنے کی استدعا مسترد کردی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سی ای او پی آئی اےایئرمارشل ارشد محمود ملک کو کام سے روکنے کے خلاف اپیل پر سماعت کی،جہاں عدالت نے ایئرمارشل ارشد محمود ملک کے کام جاری رکھنے کی استدعا مسترد کردی گئی۔

دوران سماعت چیف جسٹس نےایئر مارشل ارشد محمود ملک کی تعیناتی کے طریقہ کار پر سخت برہمی کا اظہار کرتے کہا کہ پی آئی اے قوم کی ملکیت ہےکسی کی ذاتی جاگیر نہیں،کسی کو اس ادارے کے ساتھ کھلواڑ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے،چیئرمین پی آئی اے کی تقرری کے طریقہ کار کے تعین کے لیے سپریم کورٹ میں بنیادی انسانی حقوق کا مقدمہ موجود ہے۔

چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ پی آئی اے کو خاندانی کمپنی بنادیا گیا ہے خود ڈیپوٹیشن پر آنے والے سی ای او نے چار ایئر وائس مارشل، دو ایئر کموڈور، تین ونگ کمانڈر اور ایک فلائٹ لیفٹیننٹ کو ڈیپوٹیشن پر بھرتی کیا،بہتر ہے کہ پی آئی اے کو پاکستان ائیر فورس کے حوالے کردیں جس کو چاہے بھرتی کردیں، جسے چاہیں نکال دیں،ایسا نہیں چلے گا۔چیف جسٹس نے اٹارنی جنرل کو مخاطب ہوتے کہا کہ اٹارنی جنرل صاحب آپ ذرا خود جاکر پی آئی اے میں سفر کریں، جاکر دیکھیں پی آئی اے کا حال کیا ہے،دوران سماعت جسٹس سجاد علی شاہ نے کہا کہ شاہین ائیرلائن آپ سے چلی نہیں اور چلے ہیں پی آئی اے چلانے۔

عدالت کا اپنے ریمارکس میں کہنا تھا کہ چیئرمین/سی ای او پی آئی اے کی بھرتی کے لیے اخبار میں دئیے گئے اشتہار کا بھی جائزہ لیں گے جائزہ لیں گے کہیں سی ای او ارشد ملک کی قابلیت کو مد نظر رکھ کر اخبار کا اشتہار ڈیزائن تو نہیں کیا۔

کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے ائیر کموڈورکو ٹھیکہ دینے کے معاملے پر تشویش کا اظہارکیا،چیف جسٹس نے کہا کہ آج اخبار میں خبر چھپی ہے کسی ائیر کموڈور کو ستر کروڑ روپے کا ٹھیکہ دیا گیا ہے۔

بعدازاں عدالت عظمیٰ نے پی آئی اے کے امور کو چلانے کا اختیار بورڈ آف گورنرز کو سونپ دیا اور سی ای او پی آئی اے ایئر مارشل ارشد محمود ملک کے کام جاری رکھنے کی استدعا مسترد کردی۔

عدالت نے اپنے حکم نامے میں کہا کہ بورڈ آف گورنرز کو سی ای او اور چیئرمین پی آئی اے کے اختیارات بھی حاصل ہوں گے۔

اس کے علاوہ عدالت نے سندھ ہائی کورٹ میں زیر سماعت مقدمے کا ریکارڈ طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت دوہفتوں کے لئے ملتوی کردی، ساتھ ہی سندھ ہائیکورٹ فیصلے کے خلاف اپیل سمیت تمام مقدمات کو یکجا کردیاگیا ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.