پیدائش کے بعد بچے کا سر بنانا عورتوں کا پسندیدہ کام، مگر یہ آنے والے وقت میں بچوں کو کن مشکلات کا شکار کر سکتا ہے ماہرین کی راۓ جانیں

image

بہن یہ کیا کدو جیسا لمبا سر ہو رہا ہے بچے کا تم نے اس کا سر نہیں بٹھایا یہ وہ جملہ ہے جو نئی بننے والی ماں کو بڑی بوڑھیوں اور تجربہ کار آنٹیوں کی جانب سے اکثر سننے کو ملتا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ مفت کے مشورے بھی مل جاتے ہیں

بچوں کے سر کو بٹھانے کے طریقے

عام طور پر بڑی بوڑھیوں کا یہ ماننا ہوتا ہے کہ بچے کے سر کو گول اور پیچھے کی طرف سے بٹھانا ضروری ہوتا ہے اس سے بچے کا چہرہ بھی خوبصورت لگتا ہے اور اس کا سر بھی اچھا لگتا ہے جس کے لیۓ چاولوں کی تھیلی ، خاص طریقے کے تکیۓ ، اینٹوں پر سر رکھنا جسے تکلیف دہ طریقے شامل ہوتے ہیں جس کے ذریعے سر کو پیچھے کی طرف سے دبا دیا جاتا ہے

سر کو بٹھانے کے خطرات

مگر موجودہ دور میں ماہرین کے مطابق سر کو اس طرح سے پچکانا بچے کی صحت کے لیۓ کسی طرح بھی مفید نہیں ہوتا ہے بلکہ اس طرح کے سر کو میڈيکل زبان میں فلیٹ ہیڈ سنڈروم کہا جاتا ہے یہ وہ عمل ہے جو کہ خواتین بچوں کی نرم ہڈي کی شکل کو تبدیل کر کے اپنی مہارت قرار دیتی ہیں جب کہ حقیقت میں اس طرح سے وہ بچوں کی کھوپڑی کی ہڈی کی شکل تبدیل کر کے اس کو ایک بیماری میں مبتلا کر دیتی ہیں جو کہ درج ذیل مسائل کا سبب بن سکتی ہے

سر کو بنانے کی صورت میں ہونے والے مسائل

اس طرح سے سر کو بنانے کی صورت میں کچھ بچوں میں جو مسائل پیدا ہو سکتے ہیں وہ کچھ اس طرح سے ہوتے ہیں بچوں کی فائن موٹر اسکلز کی کمزوری جس کے نتیجے میں بچے باریک بینی کے کام میں دھیان لگانے میں مشکلات کا سامنا کر سکتے ہیں بچے کے بولنے کی حس مین مسائل ، اس صورت میں بچے دیر سے بولنا شروع کرتے ہیں اس کے ساتھ ساتھ ان کی زبان میں توتلا پن بھی ہو سکتا ہے ذہانت میں کمی ، دماغ کھوپڑی کے اندر ہوتا ہے اگر کھوپڑی کی شکل کو تبدیل کیا جاۓ تو اس سے دماغ کی نشو نما بھی متاثر ہو سکتی ہے جس سے بچے کی ذہانت میں کمی واقع ہوسکتی ہے

جزبات کو محسوس کرنے کی صلاحیت میں کمی ، ہر انسان کے محسوس کرنے کی تمام حسوں کا تعلق اس کے دماغ سے ہوتا ہے دماغ کے متاثر ہونے کی صورت میں بچے کے جزبات کے اظہار کی صلاحیتوں میں بھی کمی واقع ہوسکتی ہے جس سے بچہ چڑچڑا ہو سکتا ہے اور ضدی ہونے کے بھی امکانات ہوتے ہیں

ہماری ذمہ داری

میڈیکل ماہرین کے مطابق اس صورتحال میں جب کہ اب تحقیقات بھی سامنے آچکی ہیں تو بچوں کے ساتھ یہ ظلم بند ہو جانا چاہیۓ قدرت نے جیسی شکل اور سر بنایا ہے اس کو اس طرح سے قدرتی طور پر رہنے دینا چاہیۓ اور خودساختہ طریقے سے اس میں تبدیلی سے بچنا چاہیۓ

WATCH LIVE NEWS

You May Also Like :
مزید