دھیان میں کون درندہ ہے جو بیدار ہوا

Poet: Aqeel Abbas
By: imtiaz, khi

دھیان میں کون درندہ ہے جو بیدار ہوا
میں کسی بو کی جلن پا کے خبردار ہوا

باغ کی سمت سے آتی ہے ہوا سہمی ہوئی
کون اس حبس کے موسم میں صداکار ہوا

اس جزیرے کی طرف سوچ سمجھ کر جانا
جو ترے موج میں آنے سے نمودار ہوا

تم کو لگتا ہے کہ آسان ہے دنیا داری
کار دنیا میں پٹا ہوں تو وفادار ہوا

اس بدن پر بھی مرا کام دکھائی دے گا
اور وہ کام کہ جیسے کوئی شہکار ہوا

اس نے ہر سوچ کی زنبیل الٹ کر رکھ دی
اور میں خواب دکھانے کا سزاوار ہوا

Rate it:
14 Feb, 2020

More Aqeel Abbas Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City