ہر دل کو کیا زندہ، آنکھوں کو دی بینائی

Poet: ناظم زرسنر By: ناظم زرسنر, Pakpattanshar

ہر دل کو کیا زندہ، آنکھوں کو دی بینائی
یہ دنیا محمدﷺ کے پیغام نے مہکائی

دشمن ہیں سبھی تیری اقوامِ جہاں کافر
ساتھی ہے گواہ اِس پر مومن تری تنہائی

تھی شرک کی لعنت سے بد رنگ سبھی دنیا
تکبیر جو گونجی تو صحرا میں بہار آئی

اسلام سے ہو کر دور حاصل ہوا کیا ہم کو
ہے علم غزالی سا نے دولتِ دارائی

تعلیم کا مقصد ہے گمراہ کیا جانا
یہ بات ہمیں اپنی تاریخ نے سمجھائی

لائے ہیں نظام ایسا کفار کہ ہم ہیں پست
میدانِ معیشت میں دست اُن کا ہے بالائی
 

Rate it:
Views: 251
30 Mar, 2022
More Religious Poetry
Popular Poetries
Shayari
Teer Par Teer Lagao Tumhen Dar Kis Ka Hai
Poetry in Urdu Text
Aaina Dekh Kar Tasalli Hui
Shayari
Jaun Elia Best Lines
View More Poetries
Famous Poets
View More Poets