ایران نیوکلیائی معاہدے کو خاتمے سے بچانے کے لئے تمام فریق متحرک

ایران کے جوہری معاہدے کی خرابی سے متعلق 2015 کے باقی دستخطوں کا جمعہ کے روز ویانا میں اجلاس ہوا جس میں اس تاریخی معاہدے کی بقاء کیلئے بات کی گئی جس کے بعد تہران نے اپنے جوہری پروگرام میں اس معاہدے کی حدود کی خلاف ورزی کا عہد کیا تھا۔

اس اجلاس میں برطانیہ ، فرانس ، جرمنی ، چین ، روس اور ایران کے سفیر حصہ لیں گے ، یہ پہلا موقع ہے جب جولائی کے بعد سے چھ جماعتیں اس فارمیٹ میں جمع ہوئی۔

ویانا میں تیل برآمد کرنے والے ممالک کی تنظیم اوپیک کے سالانہ اجلاس کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ایران کے مستقل مندوب کاظم غریب آبادی کا کہنا تھا کہ تیل کی پیدوار میں کمی سے متعلق کسی بھی فیصلے کا اطلاق ان ممالک پر ہونا چاہیے جو موجودہ صورتحال سے فائدہ اٹھاتے ہوئے پہلے ہی اپنے کوٹے سے زیادہ تیل پیدا کر رہے ہیں۔

انہوں نے ایرانی تیل کی برآمدات پر عائد ظالمانہ پابندیوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے واضح کیا کہ کوئی یہ توقع نہ رکھے کہ امریکی پابندیوں کے خاتمے کے بعد ایران اپنے تیل کی پیداوار میں کمی کو قبول کرلے گا۔

ایران میں تیل کی قیمتوں میں اضافےپراحتجاج،106افرادہلاکواضح رہے کہ ویانا میں اوپیک کے چودہ رکن ملکوں کے وزرائے پیٹرولیم کے اجلاس میں آئندہ سال کے دوران عالمی منڈی میں تیل کی رسد اور طلب کے درمیان توازن پیدا کرنے کی غرض سے پیداوار میں کمی کرنے یا نہ کرنے کے معاملے کا جائزہ لیا گیا۔

اطلاعات کے مطابق اوپیک کے رکن ملکوں نے تیل کی پیداوار میں مزید چار لاکھ ستانوے ہزار بیرل یومیہ کی کمی پر اتفاق کرلیا ہے جس کے نتیجے میں ان ممالک کے تیل کی مجموعی پیداوار گیارہ لاکھ ستانوے ہزار بیرل یومیہ تک پہنچ جائے گی۔

ایران، عراق، سعودی عرب، کویت ، وینیزویلا، قطر، لیبیا، متحدہ عرب امارات، الجزائر، نائیجیریا، انگولا، اور اکواڈور اوپیک کے رکن ممالک ہیں۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.