پشاور:الیکشن ٹربیونل نےشوکت ترین کےخلاف درخواست خارج کردی

image

فائل فوٹو

الیکشن ٹربیونل نے خیبرپختونخوا سے سینیٹ کی خالی نشست پر انتخاب کیلئے پی ٹی آئی کے نامزد امیدار مشیر خزانہ شوکت ترین کے کاغذات نامزدگی کیخلاف دائر داخواست خارج کردی ہے۔

الیکشن ٹربیونل نے الیکشن کمیشن کی جانب سے شوکت ترین کے کاغذات نامزدگی منظور کرنے کے فیصلے کودرست قرارد یدیا۔ شوکت ترین نے سینیٹ انتخابات کیلئے اپنا ووٹ خیبرپختونخوا منتقل کیا تھا۔

شوکت ترین کی کاغذات کو سینیٹ نشست کے لئے عوامی نیشنل پارٹی کے نامزد امیدوار شوکت جمال امیرزادہ نے چلینج کیا تھا۔ درخواست میں ریٹرننگ آفیسر کی جانب سے شوکت ترین کے کاغذات نامزدگی منظور کرنے کے اقدام کو کالعدم قراردینے کی استدعا کی گئی تھی۔

اے این پی رہنما نے درخواست میں موقف اختیار کیا تھا کہ شوکت ترین نہ مردان کا رہائشی ہے نہ ہی ان کا نام ضلع مردان کے الیکٹورل رول میں رجسٹرڈ ہیں لیکن اس کے باوجود 6 دسمبر کو ریٹرننگ آفیسر نے ان اعتراضات کو خارج کرکے کاغذات نامزدگی منظور کرلی۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی کے جنرل سیکریٹری عامر کیانی نے یکم دسمبر کو وزیراعظم کے مشیر خزانہ شوکت ترین کو سینیٹ کا ٹکٹ جاری کیا تھا۔

اس سے قبل 23 نومبر کو خیبرپختونخوا سے تحریک انصاف کے سینیٹر ایوب آفریدی نے سینیٹ رکنیت سے استعفیٰ دے دیا تھا، حکومت نے اسی نشست سے مشیر خزانہ شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ 18 اکتوبر کو سابق وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کو وزیراعظم عمران خان کا مشیر خزانہ مقرر کردیا گیا تھا جبکہ انہوں نے 17 اپریل 2021 کو وفاقی وزیر خزانہ کا حلف اٹھایا تھا۔

شوکت ترین، رکن پارلیمنٹ نہیں ہیں اس لیے انہیں وزیر اعظم عمران خان کے خصوصی اختیارات کے تحت 6 ماہ کے لیے وفاقی وزیر خزانہ کا منصب تفویض کیا گیا تھا۔ 6 ماہ کی مدت مکمل ہونے کے بعد شوکت ترین کو وزیراعظم کا مشیر خزانہ مقرر کردیا گیا تاہم بطور مشیر خزانہ وہ اقتصادی رابطہ کمیٹی اور ایکنک سمیت کمیٹیوں کی سربراہی کے مجاز نہیں ہیں۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.