کوکیز: فرانس میں فیس بُک اور گوگل پر بڑا جرمانہ

image

آن لائن پرائیویسی کے تحفظ کے فرانسیسی ادارے نیشنل کمیشن برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی اور فریڈم نے آن لائن کوکیز کے غلط استعمال پر گوگل اور فیس بک پر بھاری جرمانے عائد کردیئے۔

کوکیز ایسے پروگرام ہوتے ہیں جو ویب سائٹ صارف کے سسٹم پر کاپی کرتی ہے اور اس کی بنیاد پر ناصرف صارف کی آن لائن ایکٹیوٹی پر نظر رکھی جاسکتی ہے بلکہ صارف کو طے شدہ اشتہارات بھی دکھائے جاتے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق فرانسیسی ادارے ‘نیشنل کمیشن فار انفارمیشن ٹیکنالوجی اینڈ فریڈم‘ یا سی این آئی ایل نے 6 جنوری کو معروف انٹرنیٹ سرچ انجن گوگل کو  15 کروڑ (150 ملین) یورو کا ہرجانہ کیا، فرانس میں صارفین کی آن لائن پرائیویسی کے تحفظ کے ادارے کا کہنا ہے کہ فیس بک، یو ٹیوب اور گوگل عوام کو اس بات کا انتخاب نہیں دیتے کہ وہ آن لائن کوکیز کو رد کرسکیں بلکہ انہیں ہر حال میں ان کوکیز کو قبول کرنا ہوتا ہے۔

گوگل کمپنی جو یوٹیوب کی بھی مالک ہے، پر اس بار 15 کروڑ یورو کا جرمانہ عائد کیا گیا ہے، 2020ء میں بھی انہی بنیادوں پر گوگل پر 10 ملین یورو کا جرمانہ عائد کیا جاچکا ہے۔

فرانسیسی حکام نے دونوں اداروں کو 3 ماہ کا وقت دیا ہے تاکہ وہ یورپی یونین کی وضع کردہ ہدایات کے مطابق آن لائن کوکیز کے استعمال کا طریقۂ اختیار کریں بصورت دیگر انہیں یومیہ ایک لاکھ یورو کا ہرجانہ ادا کرنا پڑے گا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق گوگل نے فرانسیسی کمیشن کی ہدایات کے مطابق اپنے کوکیز کا آپشن منتخب کرنے کا طریقۂ کار تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کمپنی کا مزید کہنا ہے کہ انٹرنیٹ کے صارفین کی توقعات کے مطابق نئی تبدیلیاں کی جائیں گی اور گوگل سی این آئی ایل کے ساتھ مکمل تعاون کرنے کیلئے تیار ہے۔

فرانس کے اسی ادارے نے 2020ء میں ایمازون پر ایسا ہی الزام لگاتے ہوئے 60 ملین یورو ہرجانہ عائد کیا تھا۔ سی این آئی ایل کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس سال ایمازون کو 60 باقاعدہ نوٹس بھی جاری کئے تھے۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.