انڈور شادی نہ ڈائننگ: پبلک ٹرانسپورٹ میں 70 فیصد سواریاں، پھر پابندیاں لگ گئیں

image

کورونا کیسز میں اضافے کے بعد  پشاور میں جزوی پابندیاں نافذ کر دی گئیں، ان ڈور شادی اور ڈائننگ کی اجازت نہیں ہو گی، پبلک ٹرانسپورٹ میں  70 فیصد مسافر سوار کیے جا سکیں  گے۔

محکمہ داخلہ خیبرپختونخوا کی جانب  سے مختلف پابندیوں کے لیے کمشنر اور ڈپٹی کمشنر پشاور کو مراسلہ جاری کر دیا گیا ہے۔

کورونا کیسز میں 10 فیصد اضافے کے بعد نئی پابندیاں لگانے کا فیصلہ کیا گیا، 24 جنوری سے 15 فروری تک انڈور شادی اور دیگر تقریبات پر مکمل پابندی ہو گی،آوٹ ڈور تقریبات میں بھی 300 فل ویکسینٹیڈ افراد کی اجازت ہوگی۔

24 جنوری سے انڈور ڈائننگ پر بھی پابندی ہوگی،ٹیک آوے اور ہوم ڈیلیوری سروس 24گھنٹے فعال رہنے کی اجازت ہوگی۔

پبلک ٹرانسپورٹ میں 70 فیصد سے زائد سواریوں کی اجازت نہیں ہوگی، مقدس مقامات 50 فیصد فل ویکسینٹیڈ افراد کے لیے کھلے رکھنے کی اجازت ہوگی۔

سینما، تفریحی پارکس اور ہر قسم کے انڈور جیم میں 50 فیصد فل ویکسینٹیڈ افراد سے زیادہ کی اجازت نہیں ہوگی،کراٹے، باکسنگ، مارشل آرٹ، واٹر پولو، کبڈی اور ریسلنگ پر مکمل پابندی ہوگی۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
پاکستان کی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.