چاند پر اگلے ماہ کس ملک کا راکٹ گرے گا

image

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق آئندہ ماہ (مارچ میں) چاند پر ایک راکٹ گرے گا، جسے چین سے منسوب کیا جارہا ہے تاہم چین نے پیر کو چاند پر گرنے والے راکٹ کی ذمہ داری قبول کرنے سے انکار کردیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ فرانس پریس (اے ایف پی) کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے آئندہ ماہ چار مارچ کو چاند پر گرنے والے خلائی کباڑ چین کی مہم کے دوران راکٹ سے الگ ہونے والا ٹکڑا ہے۔

ماہرین فلکیات نے ابتداء میں اندازہ لگایا گیا تھا کہ یہ اسپیس ایکس کے اس راکٹ کا ایک ٹکڑا ہے جس نے 7 سال قبل پرواز بھری تھی اور مشن مکمل کرنے کے بعد اسے خلاء میں ہی چھوڑ دیا گیا تھا تاہم اب مانا جارہا ہے کہ یہ چین کی خلائی ایجنسی کے چاند پر تلاش کے پروگرام کے ایک حصے کے طور 2014ء میں لانچ کئے گئے چینگ ای 5-ٹی 1 کا ایک بوسٹر ہے۔

 ماہرین نے توقع ظاہر کی ہے کہ راکٹ 4 مارچ 202ء کو چاند کی سطح پر گرے گا لیکن چین کی وزارت خارجہ نے اس دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ زیر بحث بوسٹر ’بحفاظت زمین کی فضاء میں داخل ہوگیا تھا اور مکمل طور پر جل گیا تھا۔

وزارت خارجہ کے ترجمان وانگ وین بن نے معمول کی پریس بریفنگ میں بتایا بیجنگ خلاء میں سرگرمیوں کی طویل مدتی پائیداری کو ذمہ داری سے برقرار رکھتا ہے۔

واضح رہے کہ دنیا کی دوسری سب سے بڑی معیشت نے اپنے فوجی خلائی پروگرام میں اربوں کی سرمایہ کاری کی ہے اور وہ چاند پر انسانوں کو بھیجنے کی اُمید کر رہی ہے۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.