اک لمحۂ وصال تھا واپس نہ آ سکا

Poet: Raees Warsi
By: sohail, khi

اک لمحۂ وصال تھا واپس نہ آ سکا
وہ وقت کی مثال تھا واپس نہ آ سکا

ہر اک کو اپنا حال سنانے سے فائدہ
میرا جو ہم خیال تھا واپس نہ آ سکا

شاید مرے فراق میں گھر سے چلا تھا وہ
زخموں سے پائمال تھا واپس نہ آ سکا

شاید ہجوم صدمۂ فرقت کے گھاؤ سے
وہ اس قدر نڈھال تھا واپس نہ آ سکا

شاید میں اس کو دیکھ کے سب کو بھلا ہی دوں
اس کو یہ احتمال تھا واپس نہ آ سکا

کتنے خیال روپ حقیقت کا پا گئے
جو مرکز خیال تھا واپس نہ آ سکا

مجھ کو مرے وجود سے جو کر گیا جدا
کیسا وہ با کمال تھا واپس نہ آ سکا

ہر دم رئیسؔ وہ تو نظر کے ہے سامنے
تیرا تو یہ خیال تھا واپس نہ آ سکا

Rate it:
12 Dec, 2019

More Raees Warsi Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City