خود شناسی

Poet: Safa YasmeenBy: Safa yasmeen , Sialkot

منزل کی راہیں تو اختیار کر لے
جانِ جاں! اب تو خود سے پیار کر لے

چھوڑ ! دنیا کی رنگین فضاؤں کو
آجا! خود شناسی اختیار کر لے

خود پرستی میں رکھی نہیں ہے خود شناسی
اسی کا ہی فقدان ہے ، اختیار کر لے

پوچھیں کوئی خود شناسی منطق ہے کیا
بتانا شیرِخدا کا جواب ، اختیار کر لے

بھول گیا انسان خود شناسی کو صفا
میں کروں کیسے بیاں ، اختیار کر لے

Rate it:
Views: 559
20 Aug, 2020