دلوں میں فاصلے ہوں تو

Poet: ابنِ منیب
By: ابن منیب, سویڈن

دلوں میں فاصلے ہوں تو
سفر دشوار ہوتا ہے

اماں نہ دے سکے جو گھر
وہ گھر بیکار ہوتا ہے

دلِ مضطر کی سوزش سے
قلم تلوار ہوتا ہے

ہم اُس کو "شعر" کہتے ہیں
جو دل کے پار ہوتا ہے

بخوفِ بے حجابی کیوں
تمہیں انکار ہوتا ہے

ہمیں کب ہوش اے ظالم
دمِ دیدار ہوتا ہے

انوکھے ساز بجتے ہیں
جگر جب تار ہوتا ہے

کوئی تَو درد کا قصہ
پسِ اشعار ہوتا ہے

اُٹھے بوئے انا جس سے
وہ دل بیمار ہوتا ہے

Rate it:
19 Aug, 2016

More Urdu Ghazals Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Ibnay Muneeb
https://www.facebook.com/Ibnay.Muneeb.. View More
Visit 155 Other Poetries by Ibnay Muneeb »

Reviews & Comments

محترم وسیم صاحب اور محترمہ فرح صاحبہ، آپ کے پیغامات نے حوصلہ بڑھایا۔ ساتھ ایک نیا لفظ، "سہلِ ممتنع" بھی سیکھنے کا موقع ملا۔ بہت شکریہ :) ۔ بہت سی دعائیں اور نیک تمنائیں۔

By: Ibnay Muneeb, Lahore on Aug, 22 2016

محترم ابنِ منیب
آپ کی یہ غزل بہت خوبصورت ہے ایک ایک شعر دل کے پار ہو گیا اور شعر کی کیا خوبصورت تعرف کی ہے
ہم اس کو شعر کہتے ہیں
جو دل کے پار ہوتا ہے
آپ کی یہ غزل سہلِ ممتنع کی بہترین مثال ہے
دل خوش ہو گیا بڑا مزہ آیا
خوش رہیں
وسیم

By: wasim ahmad moghal, lahore on Aug, 21 2016

wah ..... in simple words behtareen brother bohoth hi umda Masha Allah

By: farah ejaz, Aaronsburg on Aug, 20 2016

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City