سحری جگانے والے کا گیت

Poet: سرور فرحان سرورؔ
By: سرور فرحان سرورؔ, Karachi

سحری جگا ریا ہوں
سب کو اُٹھا ریا ہوں
اُٹھ جاؤ مومنو سب
آواز لگا ریا ہوں
اپنا اصل دھندہ
ہے آج کل کچھ مندا
سو بن کے چنگا بندہ
ڈھولک بجا ریا ہوں
اُٹھ جائیں لوگ جلدی
سحری کریں پھر جلدی
روزہ رکھیں وہ جلدی
میں ثواب پا ریا ہوں
سونے کے ہیں جو دھتّی
آئی اُن کی بدبختی
اُٹھاؤں گا زبردستی
پہلے بتا ریا ہوں
سحری بناؤ آپا
سب کو اُٹھاؤ، آپا
پراٹھے کھلاؤ، آپا
میں خوشبو کھا ریا ہوں
اُٹھ گئے ہو تم جو بھائی
سونے کی مت کرو ٹرائی
مت لو ایسے جمائی
سستی بھگا ریا ہوں
سب لوگ اُٹھ گئے ہیں
اور سحری کر رہے ہیں
پیٹ اپنے بھر رہے ہیں
میں سونے جا ریا ہوں

Rate it:
22 Jul, 2013

More Funny Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Sarwar Farhan Sarwar
I have been teaching for a long time not because teaching is my profession but it has been a passion for me. Allah Almighty has bestowed me success i.. View More
Visit 95 Other Poetries by Sarwar Farhan Sarwar »

Reviews & Comments

ارے بھائی آج کل ہر کسی نے موبائل میں الارم لگا رکھے ہیں. اس کے علاوہ مسجدوں میں بھی زوروشور سے اعلان ہوتے ہیں. آپ لوگ تو بس ہم جیسے روزہ خوروں کو ہی تنگ کرتے ہو

By: Aman Waseem Arbi, Multan on Aug, 02 2013

کیا کریں امن وسیم،
ہماری شاعری سے تو کوئی جاگتا نہیں ہاں گنگنانے سے اکثر لوگ جاگ کر آواز لگاتے ہیں جس میں کچھ وقت کا بیان ہوتا ہے اور کچھ ہمارے آباء و اجداد کا تذکرہ، ویسے ایک آدھ مرتبہ ہمارے پڑوسیوں نے ہم سے خون کا رشتہ قائم کرنے کی بھی کوشش کی ہے (ہمارا خون کر کے)

اب ہمارے پاس انتقام کا ایک ہی راستہ ہے کہ سحری جگانے والے کا روپ دھار لیں، اللہ کا انعام بھی اور پروسیوں سے انتقام بھی۔

کیسا؟
By: Sarwar Farhan Sarwar, Karachi on Aug, 03 2013

ہم بہت چھوٹے تھے کہ عید کے دن یہ حضرت ہمارے دروازے پر آئے،
اس سے پہلے جمعدار چوکی دار عیدی لے جا چکے تھے، ان صاحب
نے بھی عیدی مانگی، ابّا نے ان سے پوچھا آپ کون ہو بھائی، اس نے
کہا میں اپ کو سحری میں جگاتا تھا، آبا نے کہا اچھا تو وہ تم ہو جو
ہماری نیند خراب کر تا تھا، ٹھہرو میں ابھی تمہیں بتاتا ہوں، یہ کہہ کر
وہ گھر میں داخل ہو گئے مقصد اسے عیدی نہ دینا تھا اور کوئی لڑنا وغیرہ
نہ تھا، مگر ابّا تو اندر چلے گئے، میں نے دیکھا وہ ایسے سرپٹ بھاگا، کہ
ایک ادھ بار لڑکھڑایا بھی،
آپ کی یہ نظم پڑھ کر بچپن کا وہ قصہ یاد آگیا
کہنے کا مقصد یہ تھا کہ اگر کوئی آپ کو بھی اس طرح ڈرائے تو بھاگتے
ہوئے لڑکھڑائیے گا نہیں، اس لئے بتا رہا ہوں کہ عید میں چند دن ہی باقی


خوش رہیئے

By: NADEEM MURAD, umtata RSA on Jul, 26 2013

ارے واہ صاحب،
پہلے تو اپنے بچپن کا قصہ سنا کر ڈرا دیا، اور پھر کہتے ہیں بھاگتے ہوئے لڑکھڑائیے گا نہیں،

ارے جناب،
لوگوں کو جب ہم سحری کے لئے جگانے جاتے ہیں تو اچانک کسی گلی سے، کسی گاڑی کے نیچے سے یا کسی دکان کے تھڑے سے اچانک جو مخلوق جاگ کر عف عف کرتی ہوئی پیچھے لگ جاتی ہے، اس سے ہمیں بھاگنے کی اتنی پریکٹس ہو گئی ہے کہ چار سو میٹر کی ریس میں اول آ سکتے ہیں۔

ویسے عید کے دن عیدی جمع کرنے کا سب سے بہتر طریقہ یہ ہے کہ دوپہر کے تین بجے ڈھول اور کنستر بجانا شروع کردئیے جائیں، بیچارے چاند رات کو بیگمات کو شاپنگ کروا کر تھک کر سونے والے حضرات، نیند سے اُٹھ کر ضرور کچھ نہ کچھ دے جاتے ہیں، ہاں کبھی کبھی جو کچھ وہ دینے لگتے ہیں وہ “کچھ کچھ ناقابلِ اشاعت “ بھی ہو جاتا ہے، مگر صاحب اب پیسے کے لئے تھوڑی بہت قربانی تو دینی ہی پڑتی ہے، اور یہ تو کچھ بھی نہیں، آج کل تو لوگ پیسے کے لئے کسی بھی حد تک گر سکتے ہیں یہاں تک کہ کسی ملک کے صدر بھی بن سکتے ہیں۔
By: Sarwar Farhan Sarwar, Karachi on Jul, 28 2013

haha....Very nice sarwar bhai...
You always write so nicely about diiferent
aspects.....really impressive..
Humour is an essential par of life and it must
be in life.......positive humour is really graet attitude..
hmesha khush rhain...and khushiyan spread krtay rhain...
best regards

By: muhammad nawaz, sangla hill on Jul, 25 2013

نواز بھائی،
یہ تو آپ کی محبت اور خلوص ہے کہ آپ ہمارے کلام کو نہ صرف پڑھ لیتے ہیں بلکہ دل کھول کر داد بھی دیتے ہیں۔

اللہ آپ کو ہمیشہ ہنستا مسکراتا رکھے۔ آمین
By: Sarwar Farhan Sarwar, Karachi on Jul, 28 2013

very nyc n true, payer see muskan charay pae aa gae ap ka kalam parrh ker, v fresh n entertaining, stay blessed

By: rizwana, toronto on Jul, 25 2013

بہت نوازش رضوانہ صاحبہ،

اللہ تعالٰی آپ کو ہمیشہ خوش و خرم رکھے۔ آمین
By: Sarwar Farhan Sarwar, Karachi on Jul, 28 2013

Bohat khoob .be happy always

By: A.S.Arif , Mississauga on Jul, 24 2013

Bohat Nawazish Arif Bhai,
aap ki Qeemti Daad hamesha hamarey Hoslo'n ko Buland kerti hai.
By: Sarwar Farhan Sarwar, Karachi on Jul, 25 2013
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City