طاغوت ۔۔۔

Poet: Dr. Riaz Ahmed
By: Dr. Riaz Ahmed, Karachi

ہے پوجنا انسان کی سرشت میں شامل
خالق کو نہ پوجے اگر طاغوت کو پوجے

طاغوت = کلمہِ طیبہ کی ابتدا طاغوت کے ذکر سے ہوتی ہے ۔ “ نہیں ہے کوئی معبود “ کہلوانے سے طاغوت کا رد درکار ہے۔ ہر وہ چیز جو انسان کی نظر میں اس کے رب کی سی حیثیت رکھتی ہو طاغوت ہے۔ سب سے بڑا طاغوت انسان کا نفس ہے ۔ دولت، اقتدار، اور اسی طرح کی دوسری چیزیں جن کو انسان اپنے مالک سے بڑھ کر ترجیح دے یعنی وہ چیزیں اسے اللہ کی عبادت یعنی بندگی سے باز رکھیں طاغوت ہیں۔ یہاں یہ یاد رہے کہ عبادت اور بندگی نماز روزہ حج وغیرہ ہی نہیں۔ اللہ کے احکامات خوشدلی سے ماننا اور اپنی خواہشات سے اس کی رضا کے لئے رک جانا عبادت اور بندگی ہے۔

Rate it:
25 Apr, 2014

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Dr. Riaz Ahmed
Visit 300 Other Poetries by Dr. Riaz Ahmed »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City