قحط میں جنگ کے حالات میں کیا ملتا ہے

Poet: Dr. Masood Mehmood Khan
By: Masood Mehmood Khan, Perth Australia

امریکہ کی ثالثی کی مناسبت سے ۔۔۔

محفلِ رندِ خرابات میں کیا ملتا ہے
رنگِ گل اشکوں کی برسات میں کیا ملتا ہے
میرے پیمانے کو دیکھا تو کہا واعظ نے
دیکھئے رندوں کو خیرات میں کیا ملتا ہے
جوبھی مل جائے اسے دیکھ کے خوش ہو لیجئے
قحط میں جنگ کے حالات میں کیا ملتا ہے
جو ملے کا تری اجرت سے بہت کم ہوگا
خوگرِ بخل سے ظلمات میں کیا ملتا ہے

Rate it:
17 Oct, 2019

More Funny Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Masood Mehmood Khan
Visit 45 Other Poetries by Masood Mehmood Khan »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City