منزلیں بھی یہ شکستہ بال و پر بھی دیکھنا

Poet: Ata Ul Haq Qasmi
By: faisal, khi

منزلیں بھی یہ شکستہ بال و پر بھی دیکھنا
تم سفر بھی دیکھنا رخت سفر بھی دیکھنا

حال دل تو کھل چکا اس شہر میں ہر شخص پر
ہاں مگر اس شہر میں اک بے خبر بھی دیکھنا

راستہ دیں یہ سلگتی بستیاں تو ایک دن
قریۂ جاں میں اترنا یہ نگر بھی دیکھنا

چند لمحوں کی شناسائی مگر اب عمر بھر
تم شرر بھی دیکھنا رقص شرر بھی دیکھنا

جس کی خاطر میں بھلا بیٹھا تھا اپنے آپ کو
اب اسی کے بھول جانے کا ہنر بھی دیکھنا

یہ تو آداب محبت کے منافی ہے عطاؔ
روزن دیوار سے بیرون در بھی دیکھنا

Rate it:
16 Feb, 2020

More Ata Ul Haq Qasmi Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City