موت تو میرے جذبات کہا کرتی ہے

Poet: واجد نبی
By: Wajid Nabi, Karachi

موت تو میرے جذبات کہا کرتی ہے
موت جب تو جسم و جان فنا کرتی ہے

اک ہم آہنگی ہیں جو ہے باعث اذیت
ایک ہم خیالی ہے جو تباہ کرتی ہے

تو بھی ہے میرے غم کی طرح مخلص
آخر از از زندگی سے تو نباہ کرتی ہے

خاک جو کرتی ہے میرے وجود کو تو
اس بے وفا کی یادیں کہاں کرتی ہے

مٹا کر سارے نشاں وجودِ جاں کے
تو محبت کو بے نشاں کرتی ہے

غرورِ حسن کا پاس ہی نہیں تجھکو
اجاڑ کے حسن کو قسہ تمام کرتی ہے
 

Rate it:
30 Aug, 2019

More Urdu Ghazals Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Wajid Nabi
Visit 16 Other Poetries by Wajid Nabi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City