ُُ پاک آرمی سپیشل سروسز گروپ (ایس ایس جی )

Poet: AHSAN SAILANI
By: AHSAN SAILANI, FAISAL ABAD

آفت ہیں ، غضب ہیں ہم ، بجلی کی ادا ہیں ہم
ہم قہرِ قیامت ہیں ، دشمن کی قضا ہیں ہم
ہم لوگ مجاہد ہیں ، ہم لوگ مجاہد ہیں
عقاب ہیں ، شہپر ہیں ، ظالم پر جھپٹتے ہیں
ہم آتش و آہن کے سینے میں دھڑکتے ہیں
صحراوُ ں میں جلتے ہیں ، برفوں پہ پھسلتے ہیں
میداں میں بھڑکتے ہیں، میداں میں کڑکتے ہیں
ہم لوگ مجاہد ہیں ، ہم لوگ مجاہد ہیں
جذبوں کی حرارت سے آہن بھی پگھل جائے
دو چار کرے آنکھیں ، بجلی بھی دہل جائے
دشمن کی تو ہیبت سے جاں تن سے نکل جائے
گر موت ہمیں دیکھے ، رستہ ہی بدل جائے
ہم لوگ مجاہد ہیں ، ہم لوگ مجاہد ہیں
رہتے ہیں تصرف میں افلاک بھی ، صحرا بھی
سب دشت وجبل ، گلشن ، آفاق بھی ، دریا بھی
توحید بھی ہے دل میں ، ہے عرشِ معلیٰ بھی
مٹی میں ملاتے ہیں ہم قیصر وکسریٰ بھی
ہم لوگ مجاہد ہیں ، ہم لوگ مجاہد ہیں
ہم اینٹ سے طاغوتوں کی اینٹ بجا دیں گے
ہم شہر مٹا دیں گے ، ہم خاک اڑادیں گے
پھر کشتیاں ساگر کے اُس پار جلادیں گے
دشمن کے شبستاں میں اک آگ لگا دیں گے
ہم لوگ مجاہد ہیں ، ہم لوگ مجاہد ہیں
( ''کلامِ سیلانی '' سے انتخاب، ص135، قرطاس پبلشرز، 2008 )

Rate it:
08 Oct, 2015

More Pakistan Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: AHSAN SAILANI
Visit 9 Other Poetries by AHSAN SAILANI »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City