پاکستان - اک گوھر نایاب

Poet: سید نذیر کاظمی
By: Syed Nazeer Kazmi, Al Ain

شاعر درِ فردوس ہی دیکھے گا ایسا خواب
تعبیر جس کی ایسی کہ مثل گوھرِ نایاب

شب بھر رہیں قربان جہاں چاند ستارے
دیدار رخ زیبا کو سورج رہے بیتاب

نقرئ جھرنوں سے مزین ھیں نظارے
بیٹھا ھو کوئ باغ میں چھیڑے ھوے رباب

سرسبز پہاڑوں کی ھیں برفیلی چوٹیاں
پرچم کے رنگ بکھر کہ پھیلے ھوں بے حساب

ھر فرد کےچہرے پہ آویزاں مسرت
ہر قریہ ہے روشن، ہر کوچہ ہے شاداب

تیرے جری جوان تیرے پاسبان ھیں
قائم رہے یونہی صدا تیرا یہ شباب

ہو امن اس زمیں پہ صدا ہے یہی دعا
مہکیں یونہی کلیاں، کھلتے رھیں گلاب

Rate it:
12 Aug, 2014

More Pakistan Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Nazeer Kazmi
پابند ھے پرواز فقط تیرے افق پر
میں رونقِ افلاک ھوں، محصور نہیں ھوں
.. View More
Visit 26 Other Poetries by Syed Nazeer Kazmi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City